سانحہ پشاور ، 16 اہم طالبان کمانڈر سمیت 7 حملہ آوروں کے خلاف مقدمہ درج, حملے کی منصوبہ بندی ایک ہفتہ قبل کی گئی

سانحہ پشاور ، 16 اہم طالبان کمانڈر سمیت 7 حملہ آوروں کے خلاف مقدمہ درج, حملے کی ...
سانحہ پشاور ، 16 اہم طالبان کمانڈر سمیت 7 حملہ آوروں کے خلاف مقدمہ درج, حملے کی منصوبہ بندی ایک ہفتہ قبل کی گئی

  

پشاور ( مانیٹرنگ ڈیسک ) سانحہ پشاور کے حوالے سے 16 اہم طالبان کمانڈرز سمیت 7 حملہ آوروں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق ایس ایچ او تھانہ مچنی گیٹ کی مدعیت میں 16 طالبان کمانڈرز جن میں منگل باغ ، ملا فضل اللہ ، حافظ گل بہادر ، خالد حقانی ، سیف اللہ ، عبدالولی ، حافظ دولت ، اسلم فاروقی ، منگل باغ کا بیٹا اجنبی ، قاری شکیل ، سمیت اہم رہنماﺅں کو نامزد کر دیا گیا ہے۔جبکہ ان کے علاوہ حملہ آوروں کو بھی مقدمے میں نامزد کیا گیا ہے۔سرکاری ذرائع کے مطابق حملہ آوروں کی شناخت ابو زر ، عمار ، عمران ، عزیر ، قاری ، یوسف اور چمنے کے نام سے ہوئی ہے۔دوسری جانب اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ آرمی پبلک سکول پر حملے سے ایک ہفتہ قبل پاک افغان بارڈر پر کالعدم تحریک طالبان اور ٹی ٹی پی سمیت مختلف جماعتوں کے رہنماﺅں کا اجلاس ہوا تھا جس کی صدارت کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ نے کی تھی۔اس ملاقات میں سکول پر حملے کا منصوبہ بنایا گیا تھا جبکہ دہشت گردوں کو شین درنگ مرکز باڑہ میں حملے کی تربیت بھی دی گئی تھی۔جبکہ مزید 33 دہشت گردوں کو بھی شامل تفتیش کرلیا گیا ہے۔

مزید :

پشاور -اہم خبریں -