مذہبی منافرت پھیلانے کا الزام‘ جنید حفیظ کیخلاف کیس کی سماعت آج تک ملتوی

مذہبی منافرت پھیلانے کا الزام‘ جنید حفیظ کیخلاف کیس کی سماعت آج تک ملتوی

  

ملتان (خبر نگار خصوصی) ایڈیشنل سیشن جج ملتان نے مذہبی منافرت پھیلانے کے الزام میں گرفتار سابق وزٹینگ لیکچرار جنید حفیظ کے خلاف کیس کی سماعت آج تک کے لیے ملتوی کردی ہے اور آج صبح پراسیکیوشن کی جانب سے بحث کی جائے گی۔(بقیہ نمبر48صفحہ12پر)

کیس کی سماعت گزشتہ روز شام 7 بجے تک جاری رہی جس میں ملزم کے وکیل نے بحث مکمل کرلی۔ تفصیل کے مطابق ملزم جامعہ زکریا کے سابق وزیٹنگ لیکچرار جنید حفیظ کے خلاف تھانہ الپہ میں مذہبی دل آزاری پر مبنی ریمارکس اپ لوڈ کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا جبکہ ملزم کے پہلے وکیل راشد رحمن کو مقدمہ کی پیروی کرنے پر 7 مئی 2014 کو چوک کچہری پر واقع چیمبر میں گولی مار کر قتل کردیا گیا تھا،قتل کے واقعے میں دو اور وکیل بھی زخمی ہوئے تھے،ملزم کا کیس لینے والے دوسرے وکیل کیس کی پیروی سے دستبردار ہوگئے تھے، جبکہ پیروی کرنے والے تیسرے وکیل کو بھی دوران سماعت دھمکیاں دی گئی،مقدمات کی سماعت کرنے والے چھ ججز بھی تبدیل ہوئے، ملزم کے خلاف 15 گواہوں کی شہادتیں اور ملزم کے زیر دفعہ 342 کے بیانات قلمبند کیے گئے ہیں، مقدمہ کے بقیہ 11 گواہوں کو ترک کردیا گیا،سیکورٹی خدشات کے باعث اپریل 2014 کو کیس کی سماعت سینٹرل جیل میں کرنے کی ہدایات جاری ہوئی تھی، سابق وزیٹنگ لیکچرار پر سوشل میڈیا پر مذہبی دل آزاری پر مبنی ریمارکس اپلوڈ کرنے کا مقدمہ 13 مارچ 2013 میں درج کیا گیا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -