سرائیکی جماعتوں کا اختر مینگل کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  سرائیکی جماعتوں کا اختر مینگل کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

دراہمہ(نامہ نگار) پاکستان سرائیکی پارٹی اور سرائیکستان قومی اتحاد کے کارکنان نے اختر مینگل کے تونسہ میں ڈیرہ غازی خان، راجن پور بلوچستان میں ہونے کے جلسہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرے کی قیادت پاکستان سرائیکی پارٹی کے مرکزی نائب صدر حاجی اللہ وسیا لنگاہ سرائیکستان (بقیہ نمبر21صفحہ12پر)

قومی اتحاد کے سیکرٹڑی اطلاعات فیض کریم بھٹی نے کی۔ مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی نائب صدر حاجی اللہ وسایا خان لنگاہ نے کہا کہ ڈیرہ غازی خان اور راجنپور کبھی بھی بلوچستان کا حصہ نہیں رہے، ڈیرہ غازی خان کو پندرہویں صدی میں لنگاہ سرداروں بادشاہوں نے آباد کیا تھا۔ جبکہ سبی سے لے کر پشاور تک شاہ حسین خان لنگاہ کی حکومت رہی۔ راجن پور اور ڈیرہ غازی خان خالص سرائیکی ثقافتی تہذیبی علاقے ہیں جہاں پر عرصہ درا سے صوبہ سرائیکستان کا قیام کی تحریک چل رہی ہے۔ قائد سرائیکی بیر سٹر تاج محمد لنگاہ کے فلسفہ کو لے کر صوبہ سرائیکستان کا قیام عمل میں لائیں گے۔ اس موقع پر سرائیکستان قومی اتحاد کے سیکرٹری اطلاعات فیض کریم بھٹی نے کہا کہ مخالفین جتنا بھی شور مچا لیں صوبہ سرائیکستان کے قیام کی تحریک کو روکا نہیں جا سکتا۔ ہم ہر قیمت پر مشتمل 23 اضلاع پر مشتمل صوبہ سرائیکستان کا قیام عمل میں لا کر رہیں گے۔

مظاہرہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -