بیرون ملک جائیدادوں پر ٹیکس کیخلاف درخواستوں پر سماعت ملتوی

 بیرون ملک جائیدادوں پر ٹیکس کیخلاف درخواستوں پر سماعت ملتوی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے چودھری مونس الٰہی سمیت دیگر کی بیرون ملک جائیدادوں پر عائد وفاقی ٹیکس کیخلاف درخواستوں پر مزید سماعت 22 دسمبر تک ملتوی کر دی جسٹس عاصم حفیظ کی مصروفیات کے باعث کیس میں پیش رفت نہیں ہوسکی،گزشتہ سماعت پر مونس الٰہی کے وکیل امجد پرویز نے دلائل دیئے تھے،مونس الٰہی سمیت 30 افراد نے درخواستیں دائر کر رکھی ہیں،درخواست گزاروں کا موقف ہے کہ حکومت کو اختیار نہیں کہ وہ ان پاکستانیوں سے پوچھ سکے کہ بیرون ملک پیسہ کیوں رکھا،حکومت صرف صوبہ میں مقیم پاکستانیوں سے اس بابت پوچھ سکتی ہے،بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے اثاثے اور جائیدادیں پاکستانی قوانین کی زد میں نہیں آتی، وفاقی حکومت بیرون ملک میں واقع جائیدادوں پر ٹیکس وصولی کا اختیار نہیں رکھتی،عدالت سے استدعاہے کہ ای پوٹل پر جرمانے کے بغیر ٹیکس ریٹرن جمع کرنے اوردرخواستوں کے حتمی فیصلے تک ممکنہ تادیبی کاروائی سے روکنے کا حکم دیاجائے۔

سماعت ملتوی 

مزید :

صفحہ آخر -