پی ڈی ایم حکومت فلاپ،نااہلی سامنے آگئی، شاہ محمود

پی ڈی ایم حکومت فلاپ،نااہلی سامنے آگئی، شاہ محمود

  

ملتان(نیوز  رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ عمران خان کی ٹیم پر نا اہلی کے الزامات لگانے والے خود نا ا(بقیہ نمبر34صفحہ6پر)

ہل ثابت ہوئے۔ امپورٹڈ حکمرانوں کی7ماہ کی کارکردگی نے ان کی اہلیت کی قلعی کھول دی۔7 ماہ کی کارکردگی کی بدولت امپورٹڈ حکمرانوں کی مقبولیت میں کمی جبکہ عمران خان کی مقبولیت میں اضافہ ہوا۔ پی ڈی ایم کی حکومت مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔ معیشت تباہ ہوچکی ہے،بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے۔سب سے بڑی صنعت ٹیکسٹائل نقصان میں ہے۔کسان بد حال ہیں، تاجر تباہ حال ہیں،ایل سیز نہیں کھل رہیں، ڈالر کی قیمت میں کمی واقع نہیں ہوئی۔ادویات کے لیے خام مال نہیں ہے۔ ڈالر کا ڈار سے ڈر اتر چکا ہے۔ تیزی کے ساتھ ڈالر یہاں سے فرار اختیار کررہا ہے۔آج ملک کی معیشت تباہ ہوچکی ہے۔پاکستان تیزی سے ڈیفالٹ کی طرف جارہا ہے۔غیر یقینی سیاسی و معاشی صورتحال پیدا ہوچکی ہے۔ دعوی کرکے آئے تھے چھ ماہ میں ملک کی ٹھیک کریں گے۔7 ماہ میں ملک تو ٹھیک نہیں ہوا۔ لیکن اپنے خلاف کرپشن کے مقدمات ختم کروانے میں کامیا ب ہوگئے۔ لوگوں کا اعتماد بحال کیاجائے۔تحریک انصاف سمجھتی ہے ملک کے مسائل کا حل عام انتخابات ہیں۔ملک کو بحران سے نکالنے کیلئے فوری اور شفاف انتخابات نا گزیر ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز این اے 156 میں تغلق ٹان فلائی اوور کے سنگ بنیاد کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر اختر ملک رکن صوبائی اسمبلی ندیم قریشی حاجی جاوید اختر انصاری رانا عبدالجبار قربان فاطمہ خالد جاوید وڑائچ چودھری اشفاق صدیق چھینہ مہر اکرم چاون سمیت پی ٹی آئی ورکرز انجمن تاجران تغلق ٹان کے عہدیدار اور عمائدین کی کثیر تعداد اس موقع پر موجود تھی۔ انہوں نے کہا بلاول زرداری نے سات ماہ میں 1 ارب 75 کروڑ روپے بیرونی دوروں پر خرچ کیے ہیں۔کیا ایک معاشی طور پر کمزور ملک ان شاہ خرچیوں کا متحمل ہو سکتا ہے؟قوم ان اخراجات کا حساب مانگتی ہے۔انہوں نے کہا حکومت نے اپنی ناکامی چھپانے کیلئے گھڑی گھڑی کی رٹ لگائی ہوئی ہے۔جبکہ عوام کے بنیادی مسائل پر کوئی بات نہیں کررہا۔ ان پر کوئی اعتمادہی نہیں کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی نے اسمبلی رکنیت سے استعفے پیش کئے۔ آپ نے تحریک انصاف کے استعفوں پر بدنیتی کا مظاہرہ کیا۔ہم نے ہم نے اسپیکر کو استعفے قبول کرنے کے لئے ملاقات کا وقت مانگا ہے۔ہم استعفوں کے لیے پیش ہونے کو تیار ہیں۔ہمارے اراکین کے استعفے سلیکٹڈ بنیادوں پر نہیں بلکہ تمام اراکین کے استعفے منظور کئے جائیں۔ انہو ں نے کہا پاکستان کی عوام نے ضمنی انتخابات میں حکومتی امیدواروں کو شکست دیکر گھر  پیغام دیا۔ تحریک انصاف کے ساتھ بے وفائی کرنے والوں کو عوام نے مسترد کر دیا ہے۔ عمران خان کی مقبولیت 65 فیصد ہے۔ عوام نے ان پر عدم اعتماد کیا لیکن یہ لوگ اقتدار کے ساتھ زبردستی چمٹے ہوئے ہیں۔ حکومت کا کانٹ ڈان شروع ہو چکاہے۔ انہیں گھر جانا ہوگا۔ عمران خان نے پنجاب اور کے پی کے کی اسمبلیاں تحلیل کرنے کا اعلان کیا ہواہے۔ اس حوالے سے کل عمران خان اگلے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ عمران کیا اعلان کریں گے کل آپکو پتہ چل جائے گا۔انہوں نے کہا حکومت مذاکرات پر سنجیدہ نہیں ہے۔ یہ لوگ صرف کرپشن کیسز سے چھٹکارا چاہتے ہیں۔انہیں عوام کے مسائل اور پریشانیوں کا کوئی احساس نہیں۔ عمران خان موثر مینڈیٹ چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا ہم نے بحرانوں سے نکلنے کی منصوبہ بندی کر لی ہے۔لنگڑی لولی حکومت سے مسائل حل نہیں ہوتے۔غیر یقینی صورتحال پیدا ہو چکی ہے۔انہوں نے کہا میں آج تغلق ٹان فلائی اوور کا سنگ بنیاد رکھنے آیا ہوں۔ یہاں کی عوام اور بلخصوص تاجر مبارک باد کے مستحق ہیں جن کا دیرینہ مطالبہ آج پورا نے جا رہاہے۔ اس کی فلائی اوور کی بدولت یہاں کی عوام کو ٹریفک کے مسائل سے نہ صرف نجات ملے گی بلکہ اس علاقے کے کاروبار اور ٹرانسپورٹیشن میں اضافہ ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا تغلق ٹان فلائی اوور کی تعمیر پر یہاں کے تاجروں کے تحفظات دور کئے جائیں گے۔ یہ فلائی اوور 1ارب 57 کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل ہوگا۔ جس کی تعمیر سے علاقے کی ترقی کے ایک نئے دور کاآغاز ہوگا۔ اس منصوبے سے پی پی 215، 216این اے 156 اور 157 کی عوام مستفید ہونگے۔ اس منصوبے کی تکمیل سے یہاں کی تاجر برادری کے کاروبار میں اضافہ ہوگا۔ بلکہ یہاں کی عمارتوں اور جائیدادوں کی قیمتوں میں بھی تیز ی آئیگی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -