سرد موسم میں بچوں کو یکدم کمروں سے باہر نہ نکالیں،ڈاکٹر مسعود اختر

سرد موسم میں بچوں کو یکدم کمروں سے باہر نہ نکالیں،ڈاکٹر مسعود اختر

  

لاہور (جنرل رپورٹر)سردیوں کے موسم میں چھوٹے بچوں کو یکدم اپنے کمرے سے باہر لانے سے گریز کریں خصوصاً ایسے بچے جن میں الرجی کی شکایت ہو، ورنہ فوری طور پر سانس میں رکاوٹ آ سکتی ہے۔ ایسے بچے جن کے والد، والدہ یا بہن بھائیوں میں سانس کی الرجی کی شکایت ہو، انہیں سردی میں خاص پرہیز کرنا چاہئے۔ ان خیالات کا اظہار جنرل کیڈر ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر اور پبلک ہیلتھ کنسلٹنٹ ڈاکٹر مسعود اختر شیخ نے سپیشل کڈز اِن میں بچوں کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ڈاکٹر مسعود نے کہا کہ عطائی بار بار اینٹی بائیوٹک دے کر ایسے بچوں کی صحت کو تباہ کر دیتے ہیں۔ بیماری سے  بچاؤ کے لئے سادہ پانی کی بھاپ، سردی سے بچاؤ، گرم کپڑوں کا استعمال اور صبح اور مغرب کے بعد گھر سے باہر نکلنے سے پرہیز کرنا چاہئے اور ہاتھ، پاؤں پر جرابیں اور دستانے پہنانے چاہئیں۔ جیسے جیسے بچے کی عمر بڑھتی ہے، سانس کی نالیوں کا سائز بڑا ہوتا جاتا ہے اور سانس کی یہ رکاوٹ دور ہو جاتی ہے۔ ڈاکٹر اسد عباس شاہ، ڈاکٹر رانا رفیق نے کہا کہ اگر بچہ بار بار بیمار ہو تو ماہر ڈاکٹر سے علاج کروائیں۔ غیرضروری اینٹی بائیوٹک کا استعمال خطرناک ہو سکتا ہے۔ 

چھوٹے بچوں کے لئے یخنی اور سوپ کا استعمال غذا بھی ہے اور بیماری سے بچاؤ کا علاج بھی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -