بھارت میں انجینئرنگ کے طالبعلم نے ٹائلٹ میں خودکشی کرلی 

بھارت میں انجینئرنگ کے طالبعلم نے ٹائلٹ میں خودکشی کرلی 
بھارت میں انجینئرنگ کے طالبعلم نے ٹائلٹ میں خودکشی کرلی 

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں انجینئرنگ کے 19سالہ طالب علم نے کالج ہاسٹل میں تیز دھار آلے سے گلہ کاٹ کر خودکشی کر لی۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق یہ واقعہ ریاست کرناٹک کے دارالحکومت بنگلور میں واقع اے ایم سی انجینئرنگ کالج میں پیش آیا۔ خودکشی کرنے والا نتین نامی طالب علم ریاست کیرالہ کے شہر کوزیکوڈ کا رہائشی تھا۔

پولیس کے مطابق نتین نے ہاسٹل کے ٹوائلٹ میں اپنی شہ رگ تیز دھار آلے سے کاٹ کر خودکشی کی۔ نتین کے ماں باپ دونوں دبئی میں کام کرتے ہیں۔ واقعے کے روز جب نتین کا روم میٹ کالج جانے لگا تو نتین نے جانے سے انکار کر دیا اور کہا کہ اس کے سر میں بہت درد ہے۔ 

جب اس کا روم میٹ واپس آیا تو کمرے کا دروازہ اندر سے لاک تھا۔ دستک دینے پر جب نتین نے دروازہ نہ کھولا تو روم میٹ نے ہاسٹل وارڈن کو مطلع کیا جس نے سٹاف کی مدد سے دروازہ توڑا۔ جب یہ لوگ اندر داخل ہوئے تو نتین کی لاش ٹوائلٹ میں خون میں لت پت پڑی تھی۔ نتین کے روم میٹ نے پولیس کو بتایا کہ وہ فون پر اکثر اپنے ماں باپ کے ساتھ جھگڑا کرتا تھا کہ وہ اسے اکیلا چھوڑ کر چلے گئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -