عروسی لباس کے بٹن نہ کھلنے پر دولہے نے دلہن کو مار مار کر حشر کر دیا،موقع سے فرار

عروسی لباس کے بٹن نہ کھلنے پر دولہے نے دلہن کو مار مار کر حشر کر دیا،موقع سے ...
عروسی لباس کے بٹن نہ کھلنے پر دولہے نے دلہن کو مار مار کر حشر کر دیا،موقع سے فرار

  


برمنگھم (نیوز ڈیسک) دلہن کیلئے عروسی جوڑا بھاری رقم خرچ کر کے اور خاص توجہ سے تیار کیا جاتا ہے مگر انگلینڈ میں ایک دلہن کا لباس اس قدر خاص تیار ہو گیا ہے کہ اس کی وجہ سے بیچاری کی پہلی رات ہی سخت پٹائی ہو گئی۔ 22 سالہ ایمی ڈاسن اور 29 سالہ گیون گولائٹلی نے ڈرہم کاﺅنٹی کے سینٹ میری چرچ میں شادی کی اور پھر نصف شب کے بعد ہمیش ہال ہوٹل پہنچے۔

شادی واقعی انسان کو تبدیل کر دیتی ہے ،تحقیق نے بھی بتا دیا

ایمی نے عدالت کو بتایا کہ جب وہ ہوٹل پہنچے تو کافی دیر ہو چکی تھی لیکن دونوں بہت خوشگوار موڈ میں تھے۔ سب کچھ اچانک اس وقت بدل گیا جب دولہا کافی کوشش کے بعد بھی دلہن کے لباس کے بٹن کھولنے میں ناکام ہو گیا۔ ایمی کہتی ہیں کہ ان کے خصوصی عروسی لباس کے بٹن کھولنے کیلئے ایک سپیشل کروشیہ استعمال ہوتا تھا لیکن گیون نے اسے استعمال کرنے سے انکار کر دیا اور احمقوں کی طرح بٹنوں کے ساتھ الجھتا رہا۔ جب خاصی دیر بعد بھی بٹن نہ کھل سکے تو وہ خود پر قابو نہ رکھ سکا اور ایمی کو اچانک نیچے گرا کر اسے گھونسوں اور تھپڑوں سے پیٹنا شروع کر دیا۔ بیچاری دلہن کو چہرے، گردن، کمر اور بازوﺅں پر زخم آئے۔ عروسی کمرے سے فرار ہوتے ہی اس نے پولیس کو شکایت کر دی جس کے نتیجے میں دولہے کو گرفتار کر لیا گیا۔ دولہے گیون کا کہنا ہے کہ اس نے شراب نوشی کی وجہ سے افسوسناک حرکت کی اور وہ اس کیلئے بہت شرمندہ ہے۔ ایمی نے اس سے طلاق کیلئے درخواست دے دی ہے اور اب وہ دوبارہ کبھی اس کا چہرہ نہیں دیکھنا چاہتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس