موٹروے

موٹروے
موٹروے

  

1

ہے چمکتی آب پارے کی طرح

خوشنما رنگیں نظارے کی طرح

ہے یہ موٹروے مثالِ کہکشاں

رہ نما قطبی ستارے کی طرح

ہے ٹریفک کا بہاؤ روز و شب

بہہ رہی ہے تیز دھار کی طرح

2

کھیتوں ، باغوں ، وادیوں کے درمیاں

جادہ پیما منزلوں کے درمیاں

طائروں کے غول ہیں نغمہ سرا

صبح روشن، چہچہوں کے درمیاں

لمحوں کے اندر سمٹتی جاتی ہے

گھٹتے بڑھتے فاصلوں کے درمیاں

3

تیز رفتاری کا روشن سنگِ میل

قوم کے عزم جواں کی ہے دلیل

منٹوں میں ہوتا ہے گھنٹوں کا سفر

فاصلہ ہو چاہے کتنا ہی طویل

چلتے چلتے اس سڑک کے ساتھ ساتھ

بہہ رہے ہیں چشمے جیسے سلسبیل

4

واہ موٹر وے تری جولانیاں

تو ہے تعمیر و ترقی کا نشاں

تیرے خدوخال اور چہرہ ترا

صحت مند و پُروقار و پُرفشاں

تو امنگوں ، آرزوؤں کی کفیل

تو جواں ہے روز و شب کے درمیاں

5

تیری پولیس ہر گھڑی گرمِ عمل

ہو مبادا کچھ ٹریفک میں خلل

آگے بڑھتے ہیں ٹرک اس شان سے

گا رہے ہوں جیسے غالبؔ (1) کی غزل

اے ادیبِؔ ناتواں کر احتیاط

کہہ رہی ہے تجھ سے موٹر وے سنبھل

6

مرحبا! نواز شریف(2) مرحبا!

اس وطن کا تو ہے اب فرماں روا

سامنے تیرے مسائل بے شمار

حق کرے تجھ کو عطا ذہن رسا

چھوٹا بھائی آپ کا شہباز(3) ہے

خادمِ اعلیٰ بنا پنجاب کا

مزید :

کالم -