جی سی یو میں ڈاکٹر اکبر چیمہ کے قتل کیخلاف پر امن احتجاجی واک

جی سی یو میں ڈاکٹر اکبر چیمہ کے قتل کیخلاف پر امن احتجاجی واک

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)گوررنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں ڈاکٹر تنظیم اکبر چیمہ کے قتل کے خلاف پرامن احتجاجی واک کا انعقاد،مقتول کے دو کمسن بیٹوں سمیت طلباء اور اساتذہ کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔واک کا انعقاد یونیورسٹی کی اکیڈمک سٹاف ایسوسی ایشن کی جانب سے کیا گیا تھا۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اکیڈمک سٹاف ایسوسی ایشن کے صدر پروفیسر ڈاکٹر حامد مختار کا کہنا تھا کہ کوئی بھی وجہ اتنی بڑی نہیں ہو سکتی کہ کسی انسان کے قتل کو جسٹی فائی(Justify)کر سکے، ہماری حکومت سے درخواست ہے کہ اس قتل میں جو بھی ملوث ہے اسے سخت اور جلد سزادی جائے۔پروفیسر حامد مختار نے میڈیا سے بھی درخوات کی کہ وہ اس قتل سے متعلق غیر حتمی رپورٹس شائع نہ کریں،کیونکہ اس سے طلباء اور اساتذہ کے غم میں مزید اضافہ ہوتا ہے۔واک میں وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر حسن امیر شاہ نے بھی شرکت کی اور مقتول کے بچوں کو یقین دلایا کہ یونیورسٹی کا ہر استاد ان کے والد کے قتل کے کیس کی پیروی کرے گا، تاکہ ملزمان کو سزا دلوائی جا سکے۔انہوں نے بچوں سے کہا کہ ہمارے دروازے ہر قسم کی رہنمائی اور سپورٹ کے لیے کھلے ہیں،وہ کبھی ایسا محسوس نہ کریں کے انکے والد صاحب اب جی سی یونیورسٹی میں نہیں رہے۔وائس چانسلرنے مقتول کی فیملی کو بتایا کہ وزیرِ اعلیٰ پنجاب نے اس واقع کا فوری نوٹس لیا تھا اور تب سے پولیس حکام یونیورسٹی سے رابطے میں ہیں اور انہیں پوری امید ہے کہ انہیں جلد انصاف ملے گا۔جی سی یو کے ڈین فیکلٹی آف الیکٹریکل انجیئنرنگ پروفیسر ڈاکٹر ریاض احمد کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر تنظیم اکبر چیمہ کا اخلاق بہترین تھا،ہم نے ایک اچھا استاد کھو دیا ہے۔یونیورسٹی کا ہر طالبعلم اور استاد ان کی وفات پر غم زدہ ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...