سعودی حکومت آثار رسول ؐ مٹا کر امت مسلمہ کے جذبات مجروح کر رہی ہے،حامد رضا

سعودی حکومت آثار رسول ؐ مٹا کر امت مسلمہ کے جذبات مجروح کر رہی ہے،حامد رضا

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ سعودی حکومت آثار رسول کو مٹا کر امت مسلمہ کے جذبات مجروح کر رہی ہے۔ حضور نبی کریم سے منسوب نشانات اور یادگاروں کو ختم کرنا اسلام دشمنی ہے۔ اسلامیان پاکستان بدعت کے خاتمے کے نام پر آثار نبوی کو ختم کرنے کے سعودی اقدام پر شدید نفرت اور سخت احتجاج کا اظہار کرتے ہیں۔ گورنر مکہ نے بنو سعد میں ’’ شجر رسول ‘‘کو ختم کروا کر دنیا بھر کے کروڑوں عاشقان رسول کے دلوں کو زخمی کیا ہے۔ اس سے پہلے سعودی حکومت جنت البقیع اور جنت المعلی میں صحابہ کرام، امہات المومنین اور اہل بیت کے مزارات کو بھی منہدم کر چکی ہے۔ علماء کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ سنی اتحاد کونسل سعودی عرب میں آثار رسول کو مٹانے کے خلاف دنیا بھر میں سعودی سفارت خانوں کے سامنے احتجاج کی کال دے گی۔ پاکستان سمیت دنیا بھر سے سعودی بادشاہوں کو احتجاجی خطوط ارسال کئے جائیں گے۔ مکہ اور مدینہ کا کنٹرول سعودی حکومت کی بجائے عالم اسلام کی مشترکہ کونسل کے پاس ہونا چایئے۔ سعودی بادشاہ ایک خاص فرقے کے ہاتھوں میں کھیل کر دین دشمنی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔ حرمین شریفین پوری دنیا کے مسلمانوں کی عقیدتوں کا مرکز ہیں۔ اس لئے ان پر ایک خاص گستاخ رسول فرقے کا قبضہ فساد کا سبب بن رہا ہے۔ سعودی بادشاہ امریکہ کے پٹھو بن کر عالم اسلام میں انتشار پھیلا رہے ہیں۔ آثار نبوی کی بحالی کے لئے عالمگیر تحریک چلائی جائے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...