عدم پیشی پر راؤ انوار کو توہین عدالت کا نوٹس ، اکاؤنٹس منجمد کرنے کا حکم

عدم پیشی پر راؤ انوار کو توہین عدالت کا نوٹس ، اکاؤنٹس منجمد کرنے کا حکم

اسلام آباد ،سیہون (آئی این پی) سپریم کورٹ نے نقیب اﷲ محسود قتل کیس میں پیش نہ ہونے پر سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا۔عدالت نے راؤ انوار کے تمام اکاؤنٹس بھی منجمد کرنے کا حکم دیدیا‘ چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ اگر راؤ انوار عدالت میں پیش ہوجاتے تو معاملہ حل ہوجاتا‘ سپریم کورٹ راؤ انوار کو گرفتار نہ کرنے کا حکم واپس لیتی ہے امید ہے پولیس راؤ انوار کو گرفتار کرہی لے گی‘ آئی بی‘ آئی ایس آئی اور ایم آئی اس معاملے پر اپنی الگ الگ رپورٹ عدالت میں جمع کرائیں۔ جمعہ کو سپریم کورٹ میں نقیب اﷲ محسود از خود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ عدالت میں پیش ہوئے۔ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار حفاظتی ضمانت ملنے کے باوجود عدالت میں پیش نہ ہوئے۔ چیف جسٹس ثابق نثار نے ریمارکس دیئے کہ ہم نے راؤ انوار کو پیش ہونے کی مہلت دی تھی انہوں نے بہت بڑا موقع ضائع کردیا۔کیس کی مزید سماعت 15دنوں تک ملتوی کردی گئی۔ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ راؤ انوار کے معاملے پر سپریم کورٹ کے احکامات مانیں گے۔کراچی میں پولیس مقابلے میں ماورائے عدالت قتل کیے گئے نقیب اللہ محسود کے والد کا کہنا ہے کہ ان کا بیٹا بے گناہ تھا اور راؤ انوار نے ظلم کیا۔ سپریم کورٹ میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے نقیب اللہ کے والد کا کہنا تھا کہ پولیس افسر راؤ انوار کے ظلم کے خلاف آج سپریم کورٹ آئے ہیں، ہمیں سپریم کورٹ سے انصاف چاہیے اور انشاء اللہ انصاف ملے گا۔

والد نقیب

مزید : صفحہ اول


loading...