پنجاب اسمبلی، عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر تعزیتی قرار داد متفہ طور پر منظور

پنجاب اسمبلی، عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر تعزیتی قرار داد متفہ طور پر منظور

لاہور(نمائندہ خصوصی) پنجاب اسمبلی کے ایوان میں انسانی حقوق کی علمبردار مرحومہ عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر ایک تعزیتی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی جبکہ سیالکوٹ یونیورسٹی اور ناروال یونیورسٹی کے بل بھی میں پیش دوسری جانب لاہور شہر میں تجاوزات کی بھرمار کیخلاف اپوزیشن ارکان پھٹ پڑے اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید نے عابد باکسر کو فوری پنجاب لانے کا مطالبہ کردیا جس پر وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عابد باکسر کی گرفتاری ابھی عمل میں نہیں آئی‘آصف محمود کی جانب سے کورم کی نشاندہی پر حکومت کورم پورا کرنے میں ناکام رہی۔تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کا اجلاس گزشتہ روز بھی حسب معمول 45منٹ کی تاخیر سے سپیکر رانا محمد اقبال کی زیر صدارت شروع ہوا۔اسمبلی کے ایجنڈے محکمہ لوکل گورنمنٹ اینڈ کمیونٹی ڈویلپمنٹ کے متعلق سوالات کے جواب پارلیمانی سیکرٹری رمضان صدیق بھٹی نے دیے۔پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے قواعد کی معطلی کی تحریک پیش کرنے کے بعد قرارداد پیش ،قرارداد کے مطابق یہ ایوان ممتاز قانون عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتا ہے اور ان کے غمزدہ خاندان سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتا ہے ۔مرحومہ نہایت نڈر اور جرات مند وکیل رہنما ہونے کے ساتھ ساتھ فعال سماجی کارکن اور انسانی حقوق کی علمبردار بھی تھیں۔مرحومہ کو سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی صدر ہونے کا بھی اعزاز حاصل رہا ہے۔ان کی زندگی دستور کی بالادستی ،اصولوں کی حکمرانی اور جمہوری اقدار کی سربلندی کیلئے جدوجہد میں گزری جس پر حکومت پاکستان نے انہیں ہلال امتیاز بھی عطا کیا تھا ۔ان کی خدمات کو نہ صرف پاکستان بلکہ بین الاقوامی سطح پر بھی قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔یہ ایوان ان کے درجات کی بلندی کیلئے دعا گو ہے۔قبل ازریں وقفہ سوالات کے دوران پی ٹی آئی کی رکن راحیلہ انور نے ایک ضمنی سوال میں کہا لاہور شہر میں جگہ جگہ تجاوزات کی بھر مار ہے ۔ضلعی انتظامیہ کی رٹ نظر نہیں آرہی ۔اسمبلی کی بیک سائیڈ پر تجاوزات کی وجہ سے ٹریفک جام رہنا روزانہ کا معمول بن چکا ہے۔جواب میں پالریمانی سیکرٹری رمضان صدیق بھٹی نے کہا پوری دنیا میں تجاوزات کیخلاف آپریشن ہوتے ہیں اور یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے لیکن حکومت نے خصوصی طور پر لاہور شہر میں میگا آپریشن کیے ہیں اور کافی حد تک تجاوزات پر کنٹرول کیا ہے ۔ا ۔بعدازراں اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید نے نقطہ اعتراض پر بات کرتے ہوئے کہا دو ہفتے پہلے پنجاب پولیس کے سابق انسپکٹر عابد باکسر کو انٹرپول کے ذریعے گرفتار کرنے کی خبریں سامنے آئی ۔کیا وزیر قانون بنائیں گے وہ اس وقت کہا ں ہے۔جس کے جواب میں وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے کہا انٹرپول نے پنجاب حکومت کو ایسی کوئی اطلاع نہیں دی ہے۔اگر انٹرپول نے عابد باکسر کی گرفتاری کی اطلاع پنجاب حکومت کو دی تو اس کو ضرور گرفتار کیا جائے اور انصاف کے کڑہرے میں لایا جائے گا۔پنجاب حکومت کے کہنے پر وفاقی حکومت نے اس کے ریڈ وارنٹ جاری کیے ہیں ۔بعد ازراں وزیر قانون نے سیالکوٹ یونیورسٹی اور ناروال یونیورسٹی کے بل ایوان میں پیش کردیے اسی دوران پی ٹی آئی کے رکن آصف محمود نے کورم کی نشاندہی کر دی ۔وزیر قانون مالیہ اراضی پنجاب ،پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی اور چیریٹیز پنجاب کا بل منظور نہ ہو سکا۔کورم پورا نہ ہونے پر سپیکر نے اجلاس پانچ منٹ کیلئے ملتوی کیا پانچ منٹ بعد بھی کورم پورا نہ ہوسکا سپیکر نے اجلاس پیر دوپہر دو بجے تک ملتوی کردیا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...