عوام اور پولیس کے مابین مربوط تعلقات کا فروغ وقت کا تقاضہ ہے : ڈی پی او کوہاٹ

عوام اور پولیس کے مابین مربوط تعلقات کا فروغ وقت کا تقاضہ ہے : ڈی پی او کوہاٹ

پشاور( سٹاف رپورٹر)کوہاٹ میں علاقائی امن و استحکام اور مجرمانہ سرگرمیوں کے انسداد کے حوالے سے پولیس حکام کااہم اجلاس منعقد کیا۔ضلعی پولیس سربراہ عباس مجید خان مروت کی زیر صدارت علاقائی امن،انسداد جرائم اور پبلک پولیسنگ کو فروغ دینے کے سلسلے میں ان کے دفتر میں منعقدہ لاچی اور ہیڈ کوارٹر سرکل کے ماہانہ کرائم جائزہ اجلاسوں میں ایس پی آپریشنز جمیل اختر، ڈی ایس پی لاچی روخان زیب،ڈی ایس پی سٹی رضا محمد،ایس ایچ او تھانہ کے ڈی اے انسپکٹر گل جنان،ایس ایچ او تھانہ جنگل خیل قسمت خان،ایس ایچ او تھانہ لاچی طاہر نواز،ایس ایچ او تھانہ شکردرہ محمد افضل اعوان اور ایس ایچ او تھانہ استرزئی عباس علی کے علاوہ دیگر متعلقہ پولیس حکام نے شرکت کی۔ضلعی پولیس سربراہ عباس مجید خان مروت کی زیر صدارت منعقدہ الگ الگ اجلاسوں کے دوران تھانوں کی علاقائی حدود میں امن وامان کی مجموعی صورتحال اور جرائم کی شرح کا باریک بینی سے تقابلی جائزہ لیا گیاجبکہ سنگین اور حساس نوعیت کے مقدمات کی تفتیش میں اب تک ہونیوالی پیش رفت کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاسوں میں سائلین کی طرف سے تھانوں کو موصول ہونیوالی عوامی مسائل وشکایات پر مبنی درخواستوں کا جائزہ لیا گیا اور ان درخواستوں میں درج گزارشات کے حوالے سے سائلین کو بھر پورریلیف فراہم کرنے کے سلسلے میں پولیس کی طرف سے مزید مؤثر اقدامات اٹھانے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔ضلعی پولیس سربراہ عباس مجید خان مروت نے اس موقع پر اپنے خطاب میں پولیس افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہاکہ روایتی تھانہ کلچر کو دفن کرکے امن وامان کے قیام ،جرائم کی روک تھام اور پولیس عوام کے مابین مربوط تعلقات کا فروغ وقت کا تقاضا ہے۔انہوں نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ وہ عوام کے باہمی تنازعات کو افہام وتفہیم سے ختم کرکے علاقائی سطح پراجتماعی و انفرادی مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے میں اپنا کردار ادا کریں تاکہ پیشہ ورانہ پولیسنگ کے مطلوبہ اہداف کو حاصل کیا جا سکے۔

Bac

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...