قتل کیس میں جرم ثابت نہ ہونے پر ملزم کی سزا کالعدم، بری کرنیکا حکم جاری

قتل کیس میں جرم ثابت نہ ہونے پر ملزم کی سزا کالعدم، بری کرنیکا حکم جاری

ملتان ( نمائندہ خصوصی ) ہائیکورٹ ملتان بینچ نے قتل کے مقدمہ میں جرم ثابت نہ ہونے پرملزم کی سزاکالعدم قراردے کربری (بقیہ نمبر26صفحہ7پر )

کرنے کاحکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ملزم اخترنوازنے اپیل دائرکی تھی کہ 11 فروری 2016 ء کوتھانہ کسسوال میں نسیم اختر نے مقدمہ درج کرایاکہ اس کاجواں سال بیٹا فضل الرحمن مہتمم مدرسہ ہے جس کودرخواست گذارملزم نے بلاوجہ فائرنگ کرکے قتل کردیاہے بعدازاں پولیس نے ملزم کوگرفتارکرکے تفتیش میں بتایاکہ اس واقعہ سے ایک سال قبل مقتول نے درخواست گذارملزم کو بدفعلی کانشانہ بنایاتھا جس کابدلہ لینے کے لئے ملزم نے فائرنگ کرکے اس کوقتل کیاہے اور سیشن کورٹ نے مقدمہ کی سماعت کے بعدملزم کوعمرقید سزاکاحکم دیاتھا۔ملزم کے مطابق وہ بالکل بے گناہ ہے اورگواہوں کے بیانات میں بھی تضادہے اس لئے اس کوبری کرنیکاحکم دیاجائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...