یہ بات قابل قبول نہیں کہ”وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بھی خاموشی توڑ دی، کھل کر عدالت کیخلاف بول پڑے

یہ بات قابل قبول نہیں کہ”وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بھی خاموشی توڑ دی، کھل ...
یہ بات قابل قبول نہیں کہ”وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بھی خاموشی توڑ دی، کھل کر عدالت کیخلاف بول پڑے

  

حافظ آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ وہ واحدادارہ ہے جس کا 5سال بعداحتساب ہوتاہے جبکہ کسی اورادارے کااحتساب نہیں ہوتا،انہوں نے کہاکہ عوامی نمائندے لوگوں کے ووٹوں سے منتخب ہو کر پارلیمنٹ پہنچتے ہیں، عدالتوں میں عوامی نمائندوں کومافیاکہاجاتاہے،کبھی چوراورکبھی ڈاکو کہا جاتاہے جو قابل قبول نہیں ہے جو قابل قبول نہیں ہے۔

حافظ آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شاہد خاقا عباسی نے کہا کہ سیاست کے فیصلے عوام پولنگ سٹیشن پرکرتے ہیں،جو فیصلے پارلیمنٹ اورسینیٹ کرے وہ قبول ہونے چاہئیں،انہوں نے کہا کہ ہم اداروں کااحترام کرتے ہیں،اداروں پرایک دوسرے کااحترام لازم ہے،آج ملک میں صرف ایک ہی ملزم نوازشریف ہے،ملک میں کسی اورپرکوئی الزام نہیں رہا،ہر ادارہ آئینی حدودمیں رہ کرکام کرے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ ن لیگ وہ جماعت ہے جس نے عوامی مسائل کوحل کیا،موجودہ حکومت نے ملک سے توانائی بحران کاخاتمہ کیا،مسلم لیگ ن کی حکومت نے 10ہزارمیگاواٹ سے زیادہ بجلی پیداکی،انہوں نے کہا کہ ہم نے جب حکومت سنبھالی توملک میں گیس نہیں تھی،انڈسٹری اوربجلی کے کارخانے بند تھے،آج ملک میں وافرمقدارمیں گیس موجودہے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت کیخلاف سازشیں ہوئیں،دھرنے ہوئے لیکن ہم نے ترقی کاسفرجاری رکھا،گزشتہ حکومتوں نے دعوے کئے لیکن کام کوئی نہیں کیا،ہم نے سازشوں کے باوجوداپناکام جاری رکھا،انہوں نے کہا کہ جولائی 2018 میں عوام فیصلہ کریں گے۔

انہوںنے کہا کہ سینیٹ کے الیکشن 3 مارچ کوہوں گے،سینیٹ کے الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے،پیسے کے زورپرآنے والے امیدواروں کامقابلہ کریں گے،شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ضمیرخریدنے والے پاکستان کی خدمت نہیں کرسکتے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /پنجاب /حافظ آباد