بیٹھے بٹھائے پاکستانیوں کا اربوں روپے کا نقصان ہوگیا، ایسی خبر آگئی کہ جان کر آپ کو بھی حکومت پر شدید غصہ آجائے گا

بیٹھے بٹھائے پاکستانیوں کا اربوں روپے کا نقصان ہوگیا، ایسی خبر آگئی کہ جان ...
بیٹھے بٹھائے پاکستانیوں کا اربوں روپے کا نقصان ہوگیا، ایسی خبر آگئی کہ جان کر آپ کو بھی حکومت پر شدید غصہ آجائے گا

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) حکومت نے قرضوں اور ان کے سود کی ادائیگی کے لیے مزید 50 کروڑ ڈالر کا قرضہ لے لیا جس کے باعث پاکستان پر واجب الادا قرضوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق غیر ملکی قرضوں کی ادائیگیاں سر پر ہیں جبکہ زرمبادلہ کے ذخائر میں مسلسل کمی واقع ہورہی ہے جس پر قابو پانے کے لیے حکومت نے مزید قرضہ لیا ہے۔حکومت پاکستان نے قرضوں کی ادائیگی کے لیے چینی کمرشل بینک سے 50 کروڑ ڈالر قرضہ لیا جو کہ انتہائی مہنگے داموں حاصل کیا گیا ہے۔ قرضے پر شرح سود ساڑھے 4 فیصد کے لگ بھگ ہے۔جنوری میں حکومت نے 17 کروڑ 40 لاکھ ڈالر کے کمرشل قرضے لیے۔ رواں مالی سال میں لیے گئے قرضوں کا حجم 6 ارب 60 کروڑ ڈالر ہوگیا ہے۔اقتصادی ماہرین کے مطابق غیر ملکی قرضوں کی ادائیگی رزمبادلہ ذخائر میں کمی کا باعث بن رہی ہے۔ زرمبادلہ ذخائر پر دباو کم کرنے کے لیے غیر ملکی مہنگے قرضوں کا حصول ناگزیر ہے۔

بیرونی قرضوں میں اضافہ ایک ایسے وقت میں ہورہا ہے جب پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی آتی جا رہی ہے، سٹیٹ بینک آف پاکستان رواں مالی سال کے آغاز سے اب تک زر مبادلہ کے ذخائر میں ساڑھے 3 ارب ڈالر نقصان اٹھاچکا ہے۔ وزارت خزانہ نے قومی اسمبلی میں اقرار کیا ہے کہ پاکستان کے غیر ملکی قرضوں میں تیزی کے ساتھ اضافہ ہورہا ہے۔

علاوہ ازیں زرمبادلہ کے ذخائر میں آنے والی کمی کے باعث پاکستان کے غیر ملکی قرضے تین سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئے ہیں۔

مزید : بزنس


loading...