انٹرنیٹ پر کنواری لڑکیوں کی ’فروخت‘ کا کاروبار زور پکڑ گیا، کتنی قیمت لگائی جاتی ہے اور یہ کام کیسے کیا جاتا ہے؟ انتہائی شرمناک ترین تفصیلات سامنے آگئیں

انٹرنیٹ پر کنواری لڑکیوں کی ’فروخت‘ کا کاروبار زور پکڑ گیا، کتنی قیمت لگائی ...
انٹرنیٹ پر کنواری لڑکیوں کی ’فروخت‘ کا کاروبار زور پکڑ گیا، کتنی قیمت لگائی جاتی ہے اور یہ کام کیسے کیا جاتا ہے؟ انتہائی شرمناک ترین تفصیلات سامنے آگئیں

  


ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ پر لڑکیوں کے کنوار پن فروخت کرنے کا رجحان بہت زیادہ ہو چکا ہے اور روس اس معاملے میں سرفہرست جا رہا ہے جہاں لاکھوں لڑکیاں اپنا کنوار پن فروخت کر رہی ہیں۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق انٹرنیٹ پر کئی ڈیلرز اور سکاؤٹس متحرک ہیں جو کنوار پن فروخت کرنے کی خواہش مند لڑکیوں اور امیر مردوں کے درمیان رابطے کا کام کرتے ہیں۔ یہ لوگ بھاری فیس کے عوض یہ کام کرتے ہیں جو لاکھوں میں ہوتی ہے۔یہ لوگ انٹرنیٹ پر اشتہارات کے ذریعے نوجوان کنواری لڑکیوں کو بھرتی کرتے ہیں اور پھر انہیں دولت مند مردوں کو فروخت کردیتے ہیں۔‘‘ تاہم کئی لڑکیاں ذاتی حیثیت میں بھی سوشل میڈیا پریا ڈیٹنگ ویب سائٹس پر اپنے کنوار پن کی فروخت کے اشتہارات دے رہی ہیں۔

روس میں اس حوالے سے سوشل میڈیا پر کئی آن لائن فورم بھی بنے ہوئے ہیں جن میں ایک کا نام ’Bad girls club‘ ہے۔ اس فورم میں ایک دلال نے اشتہار دیا ہے کہ ’’ہمیں روس کے مختلف شہروں سے 19سال سے کم عمر، کنواری، سمارٹ، خوبصورت، دلکش لڑکیوں کی ضرورت ہے۔ ہم ماسکو آنے اور واپس جانے کا ٹکٹ دیں گے۔ جو لڑکیاں کنوار پن فروخت کرنا چاہیں وہ ہم سے رابطہ کریں۔‘‘

اسی فورم میں ایک 19سالہ لڑکی میلانا مرسر نے بھی ذاتی طور پر بھی اشتہار دے رکھا ہے۔ اس نے لکھا ہے کہ ’’میں اپنا کنوار پن فروخت کرنا چاہتی ہوں، اس حوالے سے بات کرنے کے لیے مجھے پرائیویٹ میسج کیجیے۔ میں ماسکو سے ہوں، میری عمر 19سال ہے اور میرا قد 5فٹ 8انچ جبکہ وزن 65کلوگرام ہے۔‘‘اس کے علاوہ بھی کئی لڑکیوں کے اشتہارات اس فورم میں موجود ہیں جن کی عمریں 16سے 22سال کے درمیان ہیں۔ کئی لڑکیوں نے یہاں یہ بھی بتا رکھا ہے کہ وہ اپنا کنوار پن فروخت کر چکی ہیں۔ ایسی ایک انستاسیا نامی 20سالہ لڑکی نے لکھا ہے کہ ’’میں نے اس فورم کے ذریعے اپنا کنوار پن فروخت کیا ہے، کیونکہ مجھے میری ماں کے کینسر کے علاج کے لیے رقم چاہیے تھی۔‘‘ ایک اورمیرینا نامی لڑکی نے لکھا ہے کہ ’’میں نے 15لاکھ روبلز(تقریباً ساڑھے29لاکھ روپے) کے عوض اپنا کنوار پن فروخت کیا تھا۔ اس رقم سے میں نے ماسکو میں ایک خوبصورت اپارٹمنٹ خریداہے۔‘‘

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...