محکمہ تعلیم سے  وابسطہ ملازمین کو حج اور عمرہ کی ادائیگی میں "NOC"کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا

محکمہ تعلیم سے  وابسطہ ملازمین کو حج اور عمرہ کی ادائیگی میں "NOC"کے حصول میں ...
محکمہ تعلیم سے  وابسطہ ملازمین کو حج اور عمرہ کی ادائیگی میں

  


عمرکوٹ (سید ریحان شبیر)عمرکوٹ محکمہ تعلیم سے  وابسطہ ملازمین کو حج اور عمرہ کی ادائیگی میں "NOC"کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا پہلے مقامی سطح پر ڈی ای او یا پھر ڈائریکٹر سطح پر این او سی مل جایا کرتی تھی نئے قواعد کے تحت اب حج عمرہ پر جانے والے ملازمین کو سیکرٹری تعلیم سے این او سی لینا پڑتی ہے جس کے لیے مبینہ رشوت دینی پڑتی ہے ملازمین نے حکام بالا سے اس کو فوری ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

تفصیلات کےمطابق صوبہ سندھ سے حج اور عمرہ  پر  جانے والےمحکمہ  تعلیم کے ملازمین بالخصوص اساتذہ کو اپنے محکمہ کی طرف سے "NOC"مقامی سطح پر "DEO"یا پھر ڈائریکٹر تعلیم سے مل جایا کرتی تھی مگر اس این او سی کے حصول کے لیے ملازمین   کومحکمہ ایجوکیشن کے سیکرٹری سے "NOC"کےلیے  کراچی جانا پڑتاہے جس کے باعث غریب ملازمین کو بھاری اخراجات برداشت کرنا پڑتے ہیں خصوصاً ضلع تھرپارکر اور عمرکوٹ سمیت سندھ کے دوردراز پسماندہ علاقوں کے سرکاری ملازمین کو شدید مشکلات کا سامنا ہے تو  دوسری طرف پولیس  ویریفیکیشن  بھی ان  ملازمین کے  لیے دردسر بنی   ہوئی ہے    اور ستم ظریفی تو یہ ہے حج اور عمرہ جیسی نیک عظیم سعادت کی "NOC"کے حصول کے لیے مبینہ طور پر بھاری رشوت دینا پڑتی ہے ۔

محکمہ ایجوکیشن ملازمین کا کہنا ہے کہ دیگر سرکاری ملازمین کو این او سی مقامی سطح پر ڈپٹی کمشنر یا ڈائریکٹر سطح پر مل جاتی ہے صرف محکمہ تعلیم کے ملازمین کو مقامی سطح پر "DEO"یا ڈائریکٹر نے "NOC" دینے سے انکار کررکھا ہے ان  افسران کا  کہنا ہے کہ ہمیں پاور نہیں ہے ایک طرف  "noc  " مسئلہ ہے تو  پولیس  ویریفیکیشن  ان ملازمین  کےلیے درد سر  بنی  ہوئی  ہے   عمرکوٹ کے مذہبی حلقوں سیاسی سماجی شہری اور اساتذہ تنظیموں کے رہنماؤں نذر  محمد درس اوردیگر رہنماوں     نے مطالبہ کیا ہے کہ محکمہ تعلیم کے ملازمین سے سیکرٹری سے "این او سی "لینے کی شرط ختم کی جائے  اور ڈی  ای  او اور  ڈائریکٹر   کو   "NOC " جاری کرنے کے  پاور  دیے جائے   ملازمین کو  مالی  اور  ذہنی  اذیت سے بچایا جائے۔

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ


loading...