پراسرا ر گیس کا معاملہ، یہ لنگرانداز ہونیوالے کسی جہاز سے خارج نہیں ہوئی بلکہ دراصل ۔ ۔ ۔ وفاقی وزیر پورٹ شپنگ نے بغیر ماسک پہنے دورہ کے بعد دوٹوک اعلان کردیا

پراسرا ر گیس کا معاملہ، یہ لنگرانداز ہونیوالے کسی جہاز سے خارج نہیں ہوئی ...
پراسرا ر گیس کا معاملہ، یہ لنگرانداز ہونیوالے کسی جہاز سے خارج نہیں ہوئی بلکہ دراصل ۔ ۔ ۔ وفاقی وزیر پورٹ شپنگ نے بغیر ماسک پہنے دورہ کے بعد دوٹوک اعلان کردیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی نے کیماڑی میں پراسرار گیس کے اخراج پر ہونے والی ہلاکتوں پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان نیوی کی بائیولوجیکل اینڈ کیمیکل ڈیمیج کنٹرول (این بی سی ڈی) ٹیم نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں، کسی جہاز کے لنگر انداز ہونے سے یہ واقعہ پیش نہیں آیا، ریلوے کالونی میں جیکسن مارکیٹ کے قریب زمین سے پراسرار گیس کا اخراج ہوا تا ہم وہ گزشتہ رات ماسک پہنے بغیر خود متاثرہ علاقوں میں گئے تاکہ لوگوں کا ڈر ختم ہو۔ 

علی زیدی کا کہنا تھا کہ کیماڑی میں ہونے والے واقعے سے متعلق ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہے، تحقیقات شروع کردی گئی ہے، رپورٹ عوام کے سامنے پیش کی جائے گی۔وفاقی وزیر بحری امور علی زیدی کا کہنا ہے کہ انہوں نے ماسک کے بغیر ایسٹ وہارف میں جہازوں اور امریکا سے درآمد سویا بین کے کنٹینرز کا معائنہ کیا ہے، کسی جہاز سے گیس خارج نہیں ہورہی، سوشل میڈیا پر واقعے سے متعلق بھارتی پراپیگنڈا زیادہ لگ رہاہے ۔

انہوں نے واضح کرتے ہوئے بتایاکہ کسی جہاز کے لنگرانداز ہونے سے واقعہ پیش نہیں آیا، وائرل ویڈیو سویا بین جہاز کی ہے اور ہرکولیز نامی ملائیشیا کے جہاز میں بھی امریکہ سے سویابین آیاہے لیکن گیس کا اخراج نہیں ہورہا، وہ خود ماسک پہنے بغیر وہاں گئے ہیں، ان کاکہناتھاکہ جیکسن مارکیٹ کے قریب زمین سے پراسرار گیس نکلی ہے تا ہم   سندھ حکومت  اور کے پی ٹی کے پاس وسائل نہیں، ایک اور ادارے کو درخواست کی ہے جنہوں نے تحقیقات بھی شروع کردی ہیں۔ وفاقی وزیر نے بتایا کہ متاثر ہونے والوں میں وہی لوگ شامل ہیں جو اس علاقے میں موجود تھے ۔ 

واضح رہے کہ گزشتہ شب کراچی کے علاقے کیماڑی میں پراسرار گیس کے اخراج سے 6 افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ 100 سے زائد افراد متاثر ہوئے ہیں۔ ایس ایس پی سٹی کراچی مقدس حیدر کے مطابق رات 8 بجے کیماڑی کے مختلف مقامات میں اچانک گیس کی بو پھیل گئی جس سے شہری متاثر ہونا شروع ہوئے۔

دوسری جانب اس واقعے کے بعد کیماڑی میں افواہ پھیل گئی کہ چائنا سے آئے ہوئے کسی کنٹینر کو کھولنے کے بعد علاقے میں وائرس پھیل گیا ہے۔کے پی ٹی حکام کا کہنا ہے کہ پورٹ پر لنگر انداز کسی جہاز سے گیس کا اخراج نہیں ہوا ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /سندھ /کراچی /Breaking News