سعودی عرب مزید روشن خیال ہوگیا، خواتین اور مرد اکٹھے بیٹھ کر ’تاش‘ کھیلنے لگے

سعودی عرب مزید روشن خیال ہوگیا، خواتین اور مرد اکٹھے بیٹھ کر ’تاش‘ کھیلنے ...
سعودی عرب مزید روشن خیال ہوگیا، خواتین اور مرد اکٹھے بیٹھ کر ’تاش‘ کھیلنے لگے

  



ریاض (ڈیلی پاکستان آن لائن) شہزادہ محمد بن سلمان کے وژن 2030 کے تحت خواتین کو آہستہ آہستہ مختلف کاموں کی آزادی دی جا رہی ہے جن میں تاش کھیلنا بھی شامل ہے۔ سعودی حکومت کی اجازت کے بعد پہلی بار خواتین نے تاش کے روایتی کھیل بلوت میں نہ صرف مردوں کے شانہ بشانہ حصہ لیا بلکہ انہیں شکست بھی دے دی۔

عرب میڈیا کے مطابق ’ بلوت‘ کا مقامی سطح کا ٹورنامنٹ دارالحکومت ریاض میں ہوا جس میں مردوں کے مقابلے میں خواتین نے بھی حصہ لیا۔ ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ خواتین کو مردوں کے ساتھ بیٹھ کر بلوت کھیلنے کی اجازت دی گئی ہو۔ خیال رہے کہ بلوت ایک خاص طرز کی گیم ہے جو تاش کے پتوں کے ساتھ کھیلی جاتی ہے۔

ریاض میں ہونے والے ٹورنامنٹ میں پہلی بار حصہ لینے والی خواتین نے اپنی صلاحیتوں کا بھرپور لوہا منوایا اور یہ ٹورنامنٹ جیت لیا۔

مزید : عرب دنیا