میوزک ٹیچر نے 9 سالہ بچی کو ہراساں کیا، بڑی ہونے کے بعد متاثرہ لڑکی 10 سال بعد واپس آگئی، اپنے استاد کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا دے دیا

میوزک ٹیچر نے 9 سالہ بچی کو ہراساں کیا، بڑی ہونے کے بعد متاثرہ لڑکی 10 سال بعد ...
میوزک ٹیچر نے 9 سالہ بچی کو ہراساں کیا، بڑی ہونے کے بعد متاثرہ لڑکی 10 سال بعد واپس آگئی، اپنے استاد کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا دے دیا

  



ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت کے صنعتی شہر ممبئی میں پولیس نے 10 سال پرانے ہراسانی کے کیس میں میوزک ٹیچر کو گرفتار کرلیا ہے، ملزم پر نابالغ بچی کو مسلسل تین سال تک ہراساں کرنے کا الزام ہے، میوزک ٹیچر کی شناخت بھارت پنچال الیاس راجو کے نام سے ہوئی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق متاثرہ لڑکی 9 سال کی تھی جب الیاس راجو اسے میوزک سکھانے اس کے گھر جاتا تھا، اسی دوران وہ 2007 سے 2010 کے درمیان بچی کو جنسی ہراساں کرتا رہا، بچی 12 سال کی ہوئی تو اعلیٰ تعلیم کیلئے امریکہ منتقل ہوگئی ۔

متاثرہ لڑکی جو کہ اب امریکہ کے ایک کالج میں زیر تعلیم ہے، 10 سال بعد واپس آئی ہے اور اپنے میوزک ٹیچر کے خلاف مقدمہ درج کرادیا ہے۔ متاثرہ لڑکی نے الزام عائد کیا ہے کہ میوزک سکھانے کے دوران اس کا استاد نہ صرف اسے ہراساں کرتا تھا بلکہ اس کے ساتھ انتہائی فحش گفتگو بھی کیا کرتا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیاہے، یہ ایک پرانا کیس ہے اس لیے پولیس اس کی اچھے طریقے سے تفتیش کر رہی ہے،پولیس دیگر طلبہ کو بھی ڈھونڈ کر ان کے بیانات بھی ریکارڈ کر رہی ہے تاکہ یہ پتا لگایا جاسکے کہ ملزم نے ان کو تو ہراساں نہیں کیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس