جمعیت اہلحدیث کے سیکرٹری مالیات کا کروڑوں مالیت کی سرکاری زمین پر قبضہ

جمعیت اہلحدیث کے سیکرٹری مالیات کا کروڑوں مالیت کی سرکاری زمین پر قبضہ
جمعیت اہلحدیث کے سیکرٹری مالیات کا کروڑوں مالیت کی سرکاری زمین پر قبضہ

  


لاہور(جاوید اقبال) سابق رکن اسمبلی اور مرکزی جمعت اہلدیث پاکستان کے سیکرٹری مالیات حاجی عبدالرزاق نے دیگر دو با اثر افراد سے مل کر ایجرٹن روڈ پر واقع کروڑوں روپے مالیت کی سرکاری زمین کو اپنی پراپرٹی بنالیا، مہنگی ترین زمین پر شادی ہال کی تعمیر شروع کر ا دی ہے۔ مذکورہ با اثر شخصیات نے 12 کنال اسٹیٹ لینڈ کو اپنی 10 کنال کے قریباراضی میں شامل کرنے کیلئے مختلف ادوار میں متعلقہ پٹواریوں سے ملی بھگت کی اوراندر خانے سرکاری اراضی کی فرد حاصل کر لی جس میں حاجی عبدالرزاق کے رنگ روڈ اتھارٹی پر تعینات تحصیلدار بیٹے جمیل کی مبینہ طور پر خدمات بھی حاصل کی گئیں۔ یہ انکشاف وزیر اعلیٰ پنجاب کو انجمن تحفظ حقوق شہریاں لاہور کی طرف سے دی گئی درخواست میں کیا گیا ہے جس پر ایوان وزیر اعلیٰ نے ڈی سی او لاہور کو تحقیقات کا حکم جاری کر دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) اور مرکزی جمعیت اہلدیث کے سابق رکن پانجاب اسمبلی حاجی عبدارزاق نے اپنے دیگر دو ساتھیوں فاروق احمد ولد بشیر احمد اور بشیر احمد ولد چراغ دین کے ساتھ ساتھ ایل ڈی اے پلازہ کے سامنے ایجرٹن روز پر 3 کنال 4 مرلے فی کس کے حساب سے تقریباً 10 کنال زمین کے کاغذوں پر خریداری دکھائی ہے حالانکہ سنٹرل گورنمنٹ کا رقبہ ہے اور اس اراضی کے ساتھ پی آئی ڈی کا سرکاری دفتر موجود تھا جس کی جگہ تقریباً12 کنال 16 مرلے تھی جو آج بھی سرکاری ریکارڈ میں مرکزی حکومت کی ملکیت اسٹیٹ لینڈ ہے بعد میں جب حاجی عبدالرزاق ولد لال دین رکن پنجاب اسمبلی بنے تو انہوں نے متعلقہ پٹواریوں سے ملی بھگت کر کے اس اراضی کی 12 کنال 16 مرلے کی ’’ فرد‘‘ حاصل کر لی اور اپنے نام نہاد پہلے سے موجود 10 کنال اراضی میں سرکاری لینڈ جو کہ 12 کنال کے قریب ہے اور اس کی مالیت کروڑوں روپے میں ہے اس کو شامل کر لیا اور اس کے کاغذات کو اصل قرار دلانے کیلئے ان کے تحصیلدار بیٹے جمیل جو کہ آج کل رنگ روڈ اتھارٹی میں تعینات ہیں ان کی خدمات لی بعد ازاں ان کا وکیل بیٹا عتیق الرحمن بھی ساتھ شامل ہوگا جن کا دعویٰ ہے کہ وہ اس قدر’’ ہنر مند ‘‘ہیں کہ شالا مار باغ کی بھی رجسٹری بنوا سکتے ہیں۔ درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ کروڑوں روپے کی مہنگی ترین 12 کنال اراضی کو حاجی رزاق نے اپنی زمین میں شامل کر کے اس پر نیا شادی ہال تعمیر کر لیا گیا ہے۔ وزیر اعلیٰ سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ با اثر شخص سے سرکاری زمین کا قبضہ واپس دلائیں اور اس زمین کو فروخت کر کے حاصل ہونیوالی آمدن کو سرکاری استعمال میں لایا جائے جس پر وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ نے ڈی سی او لاہور کو تحقیقات کے لئے خط لکھ دیا ہے ۔ اس حوالے سے سابق ایم پی اے حاجی عبدالرزاق سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ میں نے اسٹیٹ لینڈ پر قبضہ نہیں کیا بلکہ 3 مراحل میں یہ زمین خریدی ہے ، زمین میری ملکیت ہے اس پر شادی ہال بنا کر رینٹ پر دیا جائے گا۔

مزید : علاقائی


loading...