آزادی اظہارِ رائے کسی کو عقائد کی توہین کا لائسنس نہیں دیتی، ضمیر اکرم

آزادی اظہارِ رائے کسی کو عقائد کی توہین کا لائسنس نہیں دیتی، ضمیر اکرم

جنیوا(خصوصی رپورٹ)اقوام متحدہ کے یورپین آفس میں پاکستان کے مستقل نمائندے ضمیر اکرم نے کہا ہے کہ آزادی اظہار کسی کو دوسروں کے مذہبی عقائد کی توہین کرنے کا لائسنس نہیں دیتی، اسلامی کانفرنس تنظیم کے رکن ممالک کے انسانی حقوق سے متعلق معاملات کے کو آرڈی نیٹر کی حیثیت سے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق زاید رعد الحسین سے ملاقات کے موقع پر انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کنونشنز کے تحت آزادی اظہار کے حق کی اپنی حدود ہیں جس کا مقصد خاصی طور پر کسی طرح کا تشدد ابھرنے کو روکنا ہے جو کہ فرانسیسی جریدے چارلی ہیبڈو کی اشتعال انگیز مطبوعات کے سلسلے میں واضح طور پر وقوع پذیر ہوا ۔ ضمیر اکرم نے کہا کہ بعض یورپی ممالک نے مسلمانوں کے حوالے سے توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کے بارے میں دوہرا معیار مقرر کر رکھا ہے جبکہ مختلف ملکوں میں مسلمانوں کے خلاف مظاہرے اسلام فوبیا کا واضح اظہار ہیں ۔ انہوں نے واضح کیا کہ اسلام امن کا مذہب ہے اور دوسروں کے عقائد کے احترام کا درس دیتا ہے چند جذباتی لوگوں کے اقدامات کو اسلام کی بدنامی کے لئے استعمال نہیں کیا جانا چاہیے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...