سارکوسارک چارٹر کے تحت ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھا رہا ہے

سارکوسارک چارٹر کے تحت ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھا رہا ہے

  

راولپنڈی (بیورورپورٹ)تجارت سے متعلق تنازعات کی ثالثی کے لیے جنوب ایشیائی ملکوں کی تنظیم سارک کاذیلی ادارہ سارکو (SARCO) فعال انداز میں کا م کر رہا ہے اور سارک چارٹر کے تحت اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھا رہا ہے سارکو کے قیام کا مقصد کمرشل ، تجارتی، صنعتی، بنکنگ اور سرمایاکاری سے جڑے تنازعات کے حل کے لیے موثر اور شفاف انداز میں کام کرنا ہے ان خیالات کا اظہار سارکو کے ڈائریکٹر جنرل تھو سانتھا وجے منا نے راولپنڈی چیمبرکے دورے کے موقع پر صدر راجہ عامر اقبال سے ملاقات میں کیا انہوں نے کہا کہ سارکو کے قیام کا مقصد سارک کے رکن ملکوں کے لوگوں کو تنازعات کے حل کے لیے عدالتی کاروائی میں جائے بغیر ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے اس موقع پر صدرر اجہ عامر اقبال نے سارکو کے قیام کو سہراتے ہوئے کہا کہ دوطرفہ تجارت کے فروغ کے لیے ایسے اداروں کا ہونا بہت ضروری ہے انہوں نے کہا کہ تاجربرادی کے نمائندوں کا اس ادارے ساتھ قریبی رابطہ اور تعلق قائم کرنا نہایت ضرور ی ہے آگاہی سمینارکے ذریعے سارک کے رکن ملکوں کے لوگوں کو مزید اور مفید معلومات سے آگاہی دی جا سکتی ہے۔

انہوں نے ڈائریکٹر جنرل تھو سانتھا وجے منا کو راولپنڈی چیمبر کی جاری سرگرمیوں اور آئندہ کے پروگراموں کے بارے میں مختصر بریفنگ بھی دی اس موقع پر سینئر نائب صدر راشد وائیں ، نائب صدر عاصم ملک، سیکرٹری عرفان منان اور مارکیٹنگ اینڈ کمیونیکیشن کنسلٹنٹ سارکو مز مہناز خورشید بھی موجود تھیں۔

مزید :

کامرس -