پائلٹ کا آئی فون مسافر جہاز کی تباہی کا باعث بن گیا

پائلٹ کا آئی فون مسافر جہاز کی تباہی کا باعث بن گیا

  

پیرس (نیوز ڈیسک) موبائل فون کی بیٹری پھٹنے کے نتیجے میں چھوٹے موٹے حادثات تو پیش آتے رہتے ہیں لیکن فرانسیسی تحقیق کار اس حیرت انگیز سوال کا جواب جاننے کی کوشش کررہے ہیں کہ کیا گزشتہ سال حادثے کا شکار ہونے والے مصری طیارے کی تباہی موبائل فون کی بیٹری پھٹنے سے ہوئی۔ڈیلی میل کی ایک رپورٹ میں فرانسیسی اخبار لاپریسین کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ گزشتہ سال پیرس کے چارلس ڈی گال ائیرپورٹ پر ریکارڈ کی جانے والی ویڈیو میں کچھ ایسے شواہد ملے ہیں جن کی بناء پر اس خدشے کا اظہار کیا جارہا ہے کہ کوپائلٹ کے موبائل فون کی بیٹری پھٹنے سے طیارہ حادثے کا شکار ہوا۔ مصری ائیرلائن کی پرواز 804 گزشتہ سال 19مئی کو پیرس سے قاہرہ کے لئے روانہ ہوئی تھی۔چارلس ڈی گال ائیرپورٹ سے ملنے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ کوپائلٹ محمد ممدوح احمد عاصم نے روانگی سے قبل اپنا آئی فون6sاور آئی پیڈ منی کاک پٹ میں انسٹرومنٹ پینل کے اوپر رکھا تھا۔ بعدازاں تحقیق کاروں نے معلوم کیا کہ یہی وہ جگہ تھی جہاں آگ بھڑکی، جس کے بعد کاک پٹ میں دھواں بھر گیا۔حادثے کی تحقیق کرنے والے ماہرین کا کہنا ہے کہ غالب امکان یہی ہے کہ موبائل فون کی بیٹری پھٹنے سے انسٹرومنٹ پینل کو نقصان پہنچا اور کاک پٹ میں آگ بھڑک اٹھی، جس کی وجہ سے طیارہ حادثے کا شکار ہوگیا۔ اس حادثے میں 66افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ تحقیقات کا سلسلہ ابھی بھی جاری ہے کیونکہ کچھ ماہرین اس بات کو بعید ازقیاس قرار دے رہے ہیں کہ کاک پٹ میں موبائل فون کی بیٹری پھٹنے سے طیارہ حادثے کا شکار ہوسکتا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -