کاٹلنگ ،جمال گڑھی سریخ بانڈہ میں پی ٹی آئی اور جماعت اسلامی کو دھچکا

کاٹلنگ ،جمال گڑھی سریخ بانڈہ میں پی ٹی آئی اور جماعت اسلامی کو دھچکا

  

کاٹلنگ (نمائندہ پاکستان) جمال گڑھی سریخ بانڈہ میں پی ٹی ائی اور جماعت اسلامی کو شدید دھچکا ، 142افراد نے اپنے پارٹیوں کا ساتھ چھوڑنے کے لئے انوکھا اندا ز اپنایا، جلسہ میں اپنے پارٹی کے ٹوپیاں اتار کر سرخ ٹوپیاں پہنالی ، قائدین اور قوم پرستی پر بھر پور اعتماد کا اظہار کیا۔ منعقدہ جلسے سے تحصیل کاٹلنگ صدر حاجی عنایت خان ، مرکزی کونسلر الحاج فضل رحمن بن یامین ، تحصیل جنرل سیکرٹری خادم حسین ، تحصیل ترجمان منتظر شاہ اور جمال باچہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سونامی کی بدنامی بنی گالہ کی شامت بنے گی۔ تبدیلی کے دعویداروں کو تبدیل کرنے کا وقت اگیا ہے۔ قوم پرستی ہی پختونوں کی نجات کا راستہ ہے۔ تحریک انصاف نے ساڑھے تین سال سڑکوں پر گزار کر نہ صرف جمہوری اصولوں کو پائمال کیا۔ بلکہ صوبے کے وسائل استعمال کرکے ترقی کا سفر عملاً رکوا دیا ۔ نیا نظا م تو دور کی بات ہے بلکہ اداروں کے انفراسٹرکچر کو مزید کمزور بنا دیا ہے۔ اس موقع پر پی ٹی ائی کے نوررحمن ، اجمل خان، توقیر ، عمرزادہ، شیراز عادل ، عامر خان، امجد خان، ہارون، اور جماعت اسلامی کے سبز علی ، گوہر شاہ، مدثر خان اور زبیر وغیرہ اپنے دیگر 142افراد سمیت اپنے پارٹیوں کے ٹوپیاں اتار کر سرخ ٹوپیاں پہن لی۔ مقررین نے پارٹی میں نئے شامل ہونے والے افراد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کیا۔ کہ سیاسی فضاء کو بدتہذیبی اور الائیشوں سے پاک کرنے کی ضرورت ہے۔ اور اس کے لئے پختونوں کے اتحاد واتفاق بنیادی تقاضہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ کے مسائل بنی گالہ حل کرواسکتی ہے۔ اور نہ ہی رائیونڈ کے حکمران ہمارے مسائل کا ادراک رکھتے ہیں۔ ہمارے پاس سرخ جھنڈے کے سوا کوئی دوسرا اپشن نہیں ہے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -