2016 لاہور ہائیکورٹ ملتان مین بنچ سزائے موت کے مجرموں کی اپیلیں : 70بری

2016 لاہور ہائیکورٹ ملتان مین بنچ سزائے موت کے مجرموں کی اپیلیں : 70بری

  

 ملتان(محمد ضیاء الحق خان سے )لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ میں2016ء میں سیشن کورٹ سے سزائے موت پانے والے142مجرموں کی اپیلیں دائر ہوئیں جن میں سے70اپیلیں منظور کرتے ہوئے مجرموں کو بری69کو عمر قید1 ملزم (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

کو5سال قید اور2مجرموں کی اپیلیں خارج کرتے ہوئے سزائے موت برقرار رکھی ۔تفصیل کے مطابق لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ میں ملتان،ساہیوال اور ڈیرہ غازیخان ڈویژن سے سزائے موت پانے والے142مجرموں کی اپیلیں دائر ہوئیں ۔ سب سے زیادہ اپیلیں ساہیوال سے26دائرکی گئیں جبکہ کم تعداد میں اپیلیں لودھراں،راجن پور سے13،13دائرکی گئیں۔لاہور ہائیکورٹ کے ملتان بنچ میں دوبار خصوصی بنچز بنائے گئے جو صرف مرڈر ٹرائل اور اہم نوعیت کے کیسز کے ساتھ ساتھ علاقائی بنچز نے بھئی سما عت کی تاہم یہ بنچز وکلاء احتجاج کے باعث ختم کردئیے گئے۔70مجرموں جن کی اپیلیں منظور کرتے ہوئے انہیں بری کیا گیا ان میں اعجاز حسین،پرویز احمد،محمد طارق،محمد اسماعیل،حبیب اللہ،حسن شاہ،محمد اکمل،ناصر علی،شہزاد حسین،احمد رضا،سلطان احمد،محمد اقبال،دلدار،محمد شاہد،جعفر علی،محمد نوید،محمد مرتضیٰ،اعجاز حسین،غلام مصطفیٰ،منیر احمد،محمداقبال،عبدا للطیف،جاوید اقبال،ذوالفقار بھٹو،خان محمد،حماد احمد،عبدالحمید،عمر دراز،محمد خالد،عاشق حسین،شاہ نواز،عابد حسین،سخی بخش،عبدالجبار،مقبول شاہ،حنیف شہزاد،خلیل احمد،محمد اعظم،عمر دراز،پیر بخش،اظہر حسین،محمد اصغر،ملازم حسین،بشیر احمد،محمد شاہد،محمد رمضان،مشتاق حسین،الطاف حسین،مختار حسین،دلاور حسین،مشتاق احمد،جمیل احمد،علی رضا،ذیشان حیدر،محمد یٰسین،ایاز حسین،محمد اختر،ہاشم علی،باقر حسین،اشتیاق احمد،سعید محمد،ریاض علی،ممتاز احمد،عبدالستار،محمد رضواناورمحمد حفیظ کی اپیلیں منظور کرتے ہوئے ملزمان کو بری کر نے کا حکم د یا۔سزائے موت سے عمر قید پانے والے مجرموں میں ذوالفقار احمد،جہانگیر احمد،عبدالعزیز،محمد رفیق،محمد افضل،محمد آصف،شوکت حسین،اللہ دتہ،محمد کامران،عبدالوحید،محمد اعظم،عبدالرحمن،احمد علی،سلیمان احمد،مقصود احمد،محمد نواز،عبدالحمید،محمد اکرم،ناصر حسین،محمد رمضان،قدیر احمد،محمد طارق،صادق حسین،شوکت حسین،صفدر حسین،اللہ دتہ،ریاض حسین،محمد اسحاق،غلام قادر،نسرین بی بی،ایوب،محمد طفیل،اعجاز حسین،محمد عرفان،پرویز احمد،محمد یوسف،غلام شبیر،سعید احمد،محمد افضل،علی نواز،محمد اکبر،قاسم شاہ،محمد منصور،محمد صدیق،یعقوب احمد،اللہ دتہ،محمد عبداللہ،محمد عارف،خالد حسین،سجاد علی،ہاشم علی،ظفر اقبال،عابد حسین،عاشق حسین،محمد مشتاق،محمد اعجاز،صابر حسین،ملک بہرام،مختار حسین،محمد شاہد،ابرار حسین،عبدالحفیظ،محمد آصف اور اسرار حسین کو عمر قید کی سزا کا حکم دیا ۔ جبکہ نصراللہ اور محمد یونس کی اپیلیں خارج کرتے ہوئے سزا برقرار رکھے جانے اور ایکمجرم اللہ دین کی اپیل پر سزائے موت کو5سال قید میں تبدیل کرنے کے احکامات دئیے گئے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -