خانیوالا ، خواتین کا سوئی گیس دفتر پر دھاوا ، فرنیچر الٹ دیا : نعرے بازی

خانیوالا ، خواتین کا سوئی گیس دفتر پر دھاوا ، فرنیچر الٹ دیا : نعرے بازی

  

 خانیوال ‘میلسی ‘ کوٹ سلطان ( نمائندگان ) سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی بجلی اور سوئی گیس غائب ‘ شہریوں کی زندگی اجیرن ہوگئی ‘ اس سلسلے میں خانیوال سے بیورو نیوز ، نمائندہ پاکستان کے مطابق سردی کی آمد کے ساتھ ہی خانیوال شہر کے بیشتر علاقوں کالو نی نمبر 3 کا لو نی نمبر 1 (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

کالو نی نمبر2سول لائن سرگانہ ہا ؤس مدینہ ٹاؤن چن شاہ بستی میں گیس کی لو ڈ شیڈنگ جاری شہری شدید پریشان خوا تین کو گھروں میں کھانے پکانے میں دشواری کا سامنا کرنا پرتا ہے جبکہ سکول جانے والے بچے بھی بعض اوقات بنا ناشتہ کیے ہی سکول چلے جاتے ہیں جب کہ دوسے جانب رات 9بجے کے بعد گیس کی غیر اعلانیہ لو ڈ شیڈنگ حکومت کا معمو ل بن گئی ہے ۔اور بعض علاقوں میں 24 گھنٹے گیس کا پریشر انتہائی کم رہتا ہے جس کی وجہ سے لوگ گھروں8 میں کمپریسر لگا کر دوسرے لوگوں کو مزید پریشانی میں ڈال دیتے ہیں گیس نہ ہو نے کی وجہ سے لو گ مہنگے داموں لکڑی خریدنے پرمجبور ہو جاتے ہیں گیس کی لو ڈ شیڈنگ کے باعث گھر کی عورتیں مٹی کے چولہے بنا کر کھانا پکانا کرتی ہیں خانیوال شہر اور کالونیوں بلال کالونی،کالونی نمبر2،کالونی نمبر1،طارق آباداور دیگر علاقوں کی درجنوں خواتین نے سو ئی گیس کی مسلسل بندش اور لو ڈشیڈنگ سے تنگ آکر دفتر پر دھاو بول دیا ،خواتین نے دفتر میں گھس کر فرنیچر کو الٹ دیا اور حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی اس موقع پر سکیورٹی گارڈ موقع سے غائب ہوگیا جبکہ متعدد اہلکار توڑپھوڑ کرنے والی خواتین کی منت سماجت کرتے رہے ،احتجاج کر نے والی خواتین آدھ گھنٹے تک دفتر میں رہیں اور وارننگ دی کہ اگر شام تک انکے گھروں میں گیس نہیں آئی تو وہ دوبارہ ڈنڈے اور سوٹوں کے ساتھ مسلح ہوکرآئینگی اور ملازمین سمیت دفتر کا گھیراؤکریں گی بعدازاں خواتین پر امن طورپر منتشر ہوگئیں۔میلسی سے تحصیل رپورٹر ، نمائندہ پاکستان کے مطابق بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 14گھنٹے تک پہنچ چکا ہے۔ جب کہ رہی سہی کسر سوئی گیس کی لوڈ شیڈنگ نے نکال دی ہے۔جس سے لوگ ذہنی اذیت کا شکار ہو چکے ہیں۔ محکمہ نادرن سوئی گیس کی جانب سے شہرمیں سوئی گیس کی سپلائی کیلئے مختلف مقامات پر پانچ ٹی پی ایس جن میں دورہٹہ۔ریاض آباد۔ریلوے چوک۔تھانہ چوک اور فدہ ٹاوٗن میں لگائی گئی ہیں چارٹی پی ایس سے ان ہی علاقوں کے گیس صارفین کو گیس فراہم کی جارہی ہے جن علاقوں میں ٹی پی ایس لگائی گئی ہیں جبکہ اندرون شہر کوگیس فراہمی کیلئے تھانہ چوک پر قائم ٹی پی ایس سے محلہ شنکرپورہ۔نیوشنکرپورہ۔فدہ بازار۔مغل پورہ۔نتھے شاہ روڈ۔کچی آبادی۔اللہ رکھا کالونی۔کچاکوٹ۔محلہ فریدی۔محلہ افغاناں۔محلہ دھرم پورہ۔پلی سناراں والی۔چاہ جھنگی والا۔مدینہ ٹاوٗن۔محلہ لعل جہانیاں۔محلہ ہری پورہ ۔ماڈل ٹاوٗن سمیت درجن بھرسے زائدعلاقوں کوگیس فراہم کی جارہی ہے جوکہ گیس پریشرمیں شدیدکمی کاباعث بن رہا ہے عوامی وسماجی حلقوں نے شدیداحتجاج کرتے ہوئے ممبرقومی اسمبلی سعیداحمدخان منیس اورجی ایم سوئی گیس ملتان سے مطالبہ کیا ہے کہ گیس صارفین کو گیس پریشرمیں کمی کی اذیت سے نجات دلانے کیلئے دیگرٹی پی ایس پرگیس کو لوڈ تقسیم کیا جائے یا گیس فراہمی کو بائی پاس سے ڈائریکٹ کیا جائے ۔کوٹ سلطان سے نامہ نگار کے مطابق گزشتہ روز بارشوں کے باعث متعدد علاقوں میں بجلی تاحال بند ہے جس سے سیکڑوں صارفین کو شدید مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے ،علاقہ مکینوں عبدالجبار ،ظفر اقبال ،سعید احمد ،فیض محمد،نبی بخش ،ریاض سوہیہ ،خادم حسین ،ایوب سیال ،جمیل خان ،اللہ وسایا ،رضوان احمد اور دیگر نے بتایا کہ بجلی کی بندش سے گھروں اور مساجد میں پانی کی شدید قلت ہو گئی ہے ،جس سے صارفین اور نمازیوں کو اذیت سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے ،انہوں نے ڈی سی لیہ اوردیگر حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -