سیف علی خان نے خاموشی توڑتے ہوئے اپنے بیٹے تیمورکے نام کے پیچھے چھپی کہانی ’’کھول ‘‘ دی تنقید کرنے والوں کو کرارا جواب دے دیا

سیف علی خان نے خاموشی توڑتے ہوئے اپنے بیٹے تیمورکے نام کے پیچھے چھپی کہانی ...
سیف علی خان نے خاموشی توڑتے ہوئے اپنے بیٹے تیمورکے نام کے پیچھے چھپی کہانی ’’کھول ‘‘ دی تنقید کرنے والوں کو کرارا جواب دے دیا

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ہندوستان کے معروف اداکار اور پٹوڈی خاندان کے چشم و چراغ سیف علی خان نے اپنے بیٹے کی پیدائش اور اس کا نام رکھے جانے کے بعد الیکٹرانک اور سوشل میڈیا پر ہونے والی تنقیداور بحث پر پہلی مرتبہ اپنی خاموشی توڑتے ہوئے نہ صرف اپنے بیٹے کے رکھے جانے والے نام کے پیچھے’’ چھپی کہانی ‘‘ کھول دی ہے بلکہ کرینہ اور انہیں تنقید کا نشانہ بنانے والوں پر ایسا طنز کیا ہے کہ جسے جان کر ہر کوئی مسکرا دے ۔

بھارتی نجی چینل’’ این ڈی ٹی وی ‘‘ کے مطابق اداکار سیف علی خان کی اداکارہ بیوی کرینہ کپور خان نے گزشتہ سال دسمبر میں ایک بیٹے کو جنم دیا، سیف نے گزشتہ سال جولائی میں کرینہ کی حمل کی خبر سوشل میڈیا پر شیئر کی تھی اور تب سے ہی یہ بچہ شہ سرخیوں بنا ہوا تھا۔دسمبر میں نومولود کی پیدائش کے فوری بعد سیف اور کرینہ نے بچے کا نام تیمور رکھا، لیکن شاید انہیں اندازہ نہیں تھا کہ بچے کے نام کے لئے انہیں لوگوں کی تنقید کا سامنا کرنا پڑے گا، سوشل میڈیا پر بچے کے نام کو لے کر کافی بحث ہوئی۔سیف علی خان سوشل میڈیا پر زیادہ فعال نہیں رہتے، جبکہ متنازعہ معماملات پر بھی زیادہ ترخاموش رہنا ہی پسند کرتے ہیں، لیکن کرینہ کپور اور اپنے بیٹے تیمور علی خان پٹودی کے نام پر ہونے والی تنقید کے بعد پہلی مرتبہ اپنی خاموشی توڑتے ہوئے سیف علی خان کا کہنا ہے کہ میرے بیٹے تیمور کے نام کو لے کر غیر ضروری ڈرامہ کھڑا کیا گیا، مجھے اس معاملے میں کچھ بھی کہنے کی ضرورت محسوس نہیں ہوئی کیونکہ بہت سے لوگوں نے اس معاملے پر سمجھداری سے اپنی بات رکھی تھی، بہت سے لوگ تھے جنہوں نے میرے اس نام رکھنے کے فیصلے کا ساتھ دیا اور مجھے محسوس کرایا کہ اپنے بیٹے کا نام اپنی مرضی سے رکھنے میں کوئی برائی نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اور میری بیوی کرینہ کو تیمور نام اور اس کا مطلب کافی پسند آیا، میں نے ترک حملہ آور اور مسلمان حکمران تیمور کے بارے میں اچھی طرح سے جانتا ہوں، میرے بیٹے کا نام تیمور ہے جس کا مطلب ’’لوہا یا فولاد ‘‘ہوتا ہے، تاہم سیف علی خان نے طنزیہ لہجے میں یہ بھی کہا کہ شاید بیٹے تیمور  کا  نام  رکھتے وقت  مجھے ’’ ڈِس کلیمر‘‘ بھی دے دینا چاہئے تھا جیسے فلموں میں دیتے ہیں’’اس نام کی کسی بھی زندہ یا مردہ شخص سے موافقت محض ایک اتفاق سمجھا جائے ‘‘۔

مزید :

تفریح -