سعودی عرب میں نئے سال میں موت کی پہلی سزا پر عملدرآمد کر دیا گیا

سعودی عرب میں نئے سال میں موت کی پہلی سزا پر عملدرآمد کر دیا گیا
سعودی عرب میں نئے سال میں موت کی پہلی سزا پر عملدرآمد کر دیا گیا

  

ریاض(ڈیلی پاکستان آن لائن) سعودی عرب میں نئے سال میں موت کی پہلی سزا پر عملدرآمد کر دیا گیا۔

سعودی وزارتِ داخلہ کے مطابق ممدوح العنزی نے اپنے ایک ہم وطن کے ساتھ جھگڑے کے بعد اْسے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔ العنزی کی سزا پر عراق کے ساتھ ملنے والے سرحدی شہر عرعر میں عملدرآمد کیا گیا۔ واضح رہے کہ عام طور پر سعودی عرب میں مجرموں کا سر قلم کرتے ہوئے اْنہیں سزائے موت دی جاتی ہے۔ گزشتہ سال سعودی عرب میں ایک سو پچاس سے زائد ملکی اور غیر ملکی قیدیوں کی موت کی سزاؤں پر عملدرآمد کیا گیا تھا ۔

مزید :

بین الاقوامی -