ادویات قیمتوں میں اضافہ ‘ میڈیکل سٹور مالکان کی لوٹ مار ‘ انتظامیہ لاپتہ

ادویات قیمتوں میں اضافہ ‘ میڈیکل سٹور مالکان کی لوٹ مار ‘ انتظامیہ لاپتہ

وہاڑی( بیورورپورٹ+نامہ نگار) انسانی جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کے بعد میڈیکل سٹور مالکان شہریوں کو لوٹنا شروع کر دیا گیا ۔ اذرائع کیمطابق انفیکشن (بقیہ نمبر46صفحہ7پر )

کے علاج کی دوا آگمنٹین 625mg گولیاں 120روپے سے 130 روپے،ملٹی وٹامن سربیکس زی کی قیمت 160 سے181 روپے،رائزک گولیوں کا پیکٹ 200 روپے سے بڑھا کر 220 روپے تک دل کی دوائی اسکارڈ 30 روپے سے 41 روپے،پیٹ کے مرض میں استعمال ہونے والی دوا ئی ریفگر 480 روپے سے بڑھ کر 531 روپے،کال پول سیرپ 48 روپے سے بڑھ کر 55 روپے،اینٹی الرجی سیرپ ریجکس 80 روپے سے بڑھ کر 91 روپے،بلند فشار خون کی دوائی ٹینورمن70سے74روپے،اینٹی بایوٹک سیفسپان کی پانچ ٹیبلٹ 500 سے بڑھ کر 540 روپے،آئرن کی کمی کی دوائی اوسنیڈ ڈی 220 سے 245،بیٹنویٹ کریم 40 سے 59 روپے،سینے کی تیزا بیت میں استعمال ہونے والا گیوسکون شربت 72 روپے سے 77 روپے،پیٹ درد مروڑ کے علاج کی 70 روپے والی دوا اب 77 روپے،اینٹی بائیوٹک سیفن کی پانچ گولیاں 325 سے 345 روپے،کھانسی کا سیرپ پلمانول 60 سے 80 روپے،کیلشیم کی دس گولیاں 122 سے135 روپے،وٹامن ڈی تھری کی کمی میں استعمال ہونے والی دوائی اوفنیڈڈی 220 روپے سے 245 روپے جسم درد،نزلہ زکام اور بخار کی عام دوا پینا ڈول کی دس گولیوں کی ریٹیل قیمت دس سے تیرہ روپے،قے میں استعمال ہونے والی موٹیلیم کی قیمت دو سو سے دو سو اکتیس روپے،نیبولائزر کے استعمال کی دوا ایٹم تیس سور روپے سے تین سو پینتیس روپے تک پہنچ گئی ہے۔شوگر،ہائی بلڈ پریشر سمیت دیگر دائمی امراض کی ادویات کی قمیتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔جس پر عوامی سماجی اور شہری حلقوں حکام بالا سے فوری اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر