نئے ڈیمز بھرنے کیلئے ہمارے پاس پانی ہی نہیں وزیر اعلٰی سندھ کا انکشاف

نئے ڈیمز بھرنے کیلئے ہمارے پاس پانی ہی نہیں وزیر اعلٰی سندھ کا انکشاف

کراچی(آئی این پی ) وزیراعلی سندھ مرادعلی شاہ نے کہاہے کہ وفاق سندھ سے پانی کے معاملے پر ناانصافی کررہا ہے، مزید ڈیمز کیلئے ہمارے پاس پانی نہیں اورجب پانی ہی نہیں تو ڈیم کو کہاں سے بھریں گے،سندھ کے ساتھ ناانصافی کرنے والے سارے دوسری جماعتوں سے ہیں، مشترکہ مفادات کونسل کے ارکان نے کراچی کو پانی دینے کی مخالفت کی تھی، ارسا نے سندھ کے ساتھ ناانصافیاں روا رکھیں۔سندھ اسمبلی میں اظہار خیال کے دوران وزیراعلی سندھ مرادعلی شاہ نے کہا کہ وفاق سندھ سے پانی کے معاملے پرناانصافی کررہا ہے، سندھ کا خطہ سب سے زیادہ ذرخیز تھا، انگریزوں نے 1859سے رکاوٹیں ڈالنا شروع کیں، سندھ میں 5دریاؤں سے پانی آتا تھا، انگریز نے گریٹر تھر کینال کی مخالفت کی تھی مگر پھر ڈکٹیٹر نے اسے بنادیا، اس وقت سندھ کا حصہ 48.7ملین ایکڑ یعنی پنجاب سے زیادہ تھا جبکہ 1948میں بھارت نے پانی بند کردیا تھا۔وزیراعلی سندھ نے کہا کہ انڈس واٹر ٹریٹی میں سندھ کا ایک بھی نمائندہ نہیں لیا گیا، انڈس واٹر ٹریٹی میں بھارت کو 3دریا دیدئیے گئے، جس سے پانی تو کم ہونا ہی تھا۔مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ کے حق کیلئے کچھ نہیں کیا گیا، سی سی آئی اس مرتبہ عجیب سی بنی ہے، سندھ کے ممبران نے ہی معاملہ کونسل کو بھیجنے کی سفارش کی، 1991میں پنجاب کا حصہ بڑھادیا گیا، سب سے کم اضافہ سندھ کے حصے میں کیا گیا۔

وزیراعلی سندھ / انکشاف

مزید : صفحہ آخر