کانگریس مین سٹیوکنگ کیخلاف امریکی ایوان نمائند گان میں قرار داد منظور

کانگریس مین سٹیوکنگ کیخلاف امریکی ایوان نمائند گان میں قرار داد منظور

واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف)امریکی ایوان نمائندگان نے واضح اکثر یت کیساتھ ایک قرار داد منظورکی ہے جس میں ایک کانگریس مین سیٹوکنگ کے سفید فام نسل پرستانہ خیالات کو سختی سے مسترد کر دیا ہے اس کے بعد ریاست آئیو وا سے تعلق رکھنے والے ری پبلکن پارٹی نے اسے تمام اہم کمیٹیوں کی رکنیت سے فارغ کر دیا ہے بلکہ بہت سے ارکان اسے مستعفی ہونے کا مشورہ دے رہے ہیں۔ مسئلہ یہاں سے شر و ع ہوا تھا کہ کانگریس مین کنگ نے کچھ عرصہ پہلے ’’نیویارک ٹائمز‘‘ کو ایک انٹرویوکے دوران اس رائے کا اظہار کیا تھا کہ سفید فام باشندوں کی برتری کے مطالبے کو جارحانہ قرار نہیں دیناچاہیے جس سے بلواسطہ یہ مطلب نکلتا تھا وہ اس کے حق میں ہیں،اس انٹر ویو کے بعد انہوں نے وضاحت کی تھی ان کا مطلب یہ نہیں تھا جو سب نکالنے میں مصروف ہیں ،ایوان نمائندگان میں جہاں اب ڈیموکریٹس کی اکثریت ہے نسل پرستی کے حق میں کانگریس مین کنگ کے خیالات کی مذمت میں قرارداد ڈیموکرٹیک چیف و ہیپ نے پیش کی تھی، کانگریس مین کنگ جوڈیشری ، زراعت اور سمال بزنس کی کمیٹیوں کے رکن ہیں جہاں سے انہیں فارغ کیا جارہا ہے،کانگریس مین کنگ کیخلاف قرارداد کے حق میں 231ڈیموکریٹس کے علاوہ 193ریپبلکن ارکان نے ووٹ ڈالا۔

قرار داد

مزید : صفحہ اول