حکومت محنت کشوں کی اجرت میں مہنگائی کے تناسب سے اضافہ کرے،آئی اے رحمن

حکومت محنت کشوں کی اجرت میں مہنگائی کے تناسب سے اضافہ کرے،آئی اے رحمن

لاہور(پ ر)حکومت ضروریات زندگی کی اشیاء میں کمر توڑ مہنگائی دور کرے محنت کشوں کی اجرت میں مہنگائی کے مطابق اضافہ کرے اور کارکنوں کو باوقار روزگار کی فراہمی اور محنت کشوں کے بنیادی حق انجمن سازی اور اجتماعی سودا کاری اور محفوظ و صحت مند حالا ت کار مہیا کرکے انہیں کام پر حادثات اور پیشہ وارانہ بیماریوں سے روکے۔ وزیر اعظم پاکستان کی افتتاحی تقریر میں یقین دہانی کردہ اعلان کے مطابق محنت کشوں کے لئے قانون سازی آئی ایل او کی توثیق شدہ کنونشنوں کے مطابق کرکے زرعی، بنکوں، ریلوے اور نادرا کے محنت کشوں پر پابندیاں ختم کرائے ان خیالات کا اظہار عالمی ادارہ محنت کی صدسالہ سالگرہ کے موقعہ پر آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کے زیر اہتمام قومی کانفرنس میں مقررین آئی اے رحمان نمائندہ انسانی حقوق کمیشن آف پاکستان اور ڈاکٹر راشدامجدسابقہ ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ برانچ آئی ایل او آفس جینوا اور بزرگ مزدور رہنماء خورشید احمدجنرل سیکرٹری، روبینہ جمیل صد ر، عبدالطیف نظامانی، حاجی رمضان اچکزئی، اکبر علی خان نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ حکومت پنجاب کی پچھلے ماہ اعلان کردہ لیبر پالیسی کے مطابق گھریلو کارکنوں کے لئے خصوصی قانون سازی کرکے بل ا سمبلی میں پیش کردیا ہے۔ اس موقعہ پر انصر مجید نیازی صوبائی وزیر برائے محنت حکومت پنجاب نے کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ حکومت فرسودہ مزدور قوانین میں ترقی پسندانہ ترامیم آئی ایل او کنونشنوں کے مطابق صوبائی اسمبلی میں جلد پیش کررہی ہے اور کارکنوں کی اجرتوں میں مناسب اضافہ اور سماجی تحفظ ملازمین کے آرڈیننس 1965 ؁ کے تحت کارکنوں کو ریٹائرمنٹ کے بعد طبی سہولت مہیا کرنے کا انتظام کیا جارہا ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1