منی بجٹ میں عوام پر کم سے کم بوجھ ڈالا جائے، شاہد رشید بٹ

منی بجٹ میں عوام پر کم سے کم بوجھ ڈالا جائے، شاہد رشید بٹ

اسلام آباد( آن لائن )اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز کے سرپرست شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ بڑھتے ہوئے افراط زر، قرضوں کا پہاڑ، روپے کی خستہ حالی ، زرمبادلہ کے ذخائر کا صفایا اور موجودہ عدم استحکام سابقہ حکومت کا تحفہ ہے جس سے موجودہ حکومت نمٹنے کی بھرپور کوشش کر رہی ہے جس میں کامیابی انکا مقدر ہے۔شاہد رشید بٹ نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ حکومت کی محاصل سے ہونے والی آمدنی میں ایک سو ستر ارب روپے کی کمی آئی ہے جبکہ دیگر مشکلات اسکے علاوہ ہیں جسکی وجہ سے منی بجٹ مجبوری بن گیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ منی بجٹ میں امیر طبقہ کو نشانہ بنانے، غیر ضروری درامدات پر ڈیوٹی بڑھانے اور غریب طبقہ کی جان بخشی کی ضرورت ہے۔ سابقہ حکومت کی غریبوں کو نچوڑنے کی پالیسی ترک کر دی جائے جبکہ ارب پتی ٹیکس چوروں کو نشانہ بنایا جائے۔انھوں نے کہا کہ کفایت شعاری کے لئے دکھاوے کے اقدامات کے بجائے حقیقی فیصلے کئے جائیں جبکہ کاروبار کرنا آسان بنایا جائے تاکہ مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کیا جا سکے۔

انھوں نے کہا کہ سرمایہ کاری میں اضافہ کے بغیر نہحکومت کی آمدنی بڑھے گی نہ عوام کو روزگار ملے گا۔

مزید : کامرس