”آصف علی زرداری کو گھسیٹنے والی بات نہیں کرنی چاہئے تھی کیونکہ۔۔۔“ سعد رفیق نے قومی اسمبلی میں ایسی بات کہہ دی کہ شہباز شریف تو کیا نواز شریف بھی دنگ رہ جائیں

”آصف علی زرداری کو گھسیٹنے والی بات نہیں کرنی چاہئے تھی کیونکہ۔۔۔“ سعد رفیق ...
”آصف علی زرداری کو گھسیٹنے والی بات نہیں کرنی چاہئے تھی کیونکہ۔۔۔“ سعد رفیق نے قومی اسمبلی میں ایسی بات کہہ دی کہ شہباز شریف تو کیا نواز شریف بھی دنگ رہ جائیں

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وفاقی وزیر ریلوے اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءخواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ اپوزیشن کے اتحاد کو حکومت خطرہ نہ سمجھے کیونکہ یہ پارلیمانی روایت ہے، ہمیں آصف علی زرداری کو سڑکوں پر گھسیٹنے والی بات نہیں کرنی چاہئے تھی۔

تفصیلات کے مطابق خواجہ سعد رفیق نے قومی اسمبلی میں اظہارخیال کرتے ہوئے کہا کہ ایوان میں ایسی باتیں کی جاتی ہیں جن کا وجود ہی نہیں، ہم حکومت کے مینڈیٹ کوتسلیم نہیں کرتے لیکن پھربھی حکومت گرانا نہیں چاہتے اوراستدعا ہے کہ اپوزیشن کے اتحاد کو حکومت خطرہ نہ سمجھے یہ پارلیمانی روایت ہے، آپ کو وقت دینا چاہتے ہیں کہ اپنے وعدوں پر10 فیصد بھی عمل کر لیں۔

انہوں نے کہا کہ افسوس ہے وزیراعظم اور تمام وزراءگالیوں پر لگے ہیں لیکن یاد رکھیں کہ چند ماہ بعد آپ بھی ہماری طرح ہوں گے، اگر خودمختار پارلیمنٹ بنانی ہے تو اس دھکم پیل سے نکلیں، ہمیں آصف علی زرداری کو گھسیٹنے والی بات نہیں کرنی چاہئے تھی لیکن زبان پھسل جاتی ہے جیسے میں نے مرد کا بچہ والی بات کی تھی۔

سعد رفیق نے کہا کہ پہلے یوسف رضا گیلانی کو پھر نواز شریف کو نکالا، نہیں چاہتے عمران خان کو بھی ایسے نکالا جائے، وزرائے اعظم کو فیصلوں سے ایسے نہیں نکالا جانا چاہئے ، وزیراعظم کو مشورہ دوں گا اپنے مخلص دوستوں کو بٹھائیں اور بات کریں۔ سعد رفیق نے کہا کہ جیل کی سلاخوں کے پیچھے سے ایک اور انداز میں تمام صورتحال کو دیکھ سکتا ہوں، بندہ جیل میں ہو تو سوچنے کا بہت وقت ہوتا ہے اور آپ کے دوست جو آپ کے نہیں ہمارے ساتھ آپ کی لڑائی کرانا چاہتے ہیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی