اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے پر وزراء اور سینیٹرز سمیت 318ارکان اسمبلی کی رکنیت معطل

    اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے پر وزراء اور سینیٹرز سمیت 318ارکان اسمبلی ...

  



اسلام آباد(آن لائن) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اثاثوں کی تفصیلات نہ جمع کرانے والے وفاقی اور صوبائی وزرا،سینیٹرزسمیت 318پارلیمینٹرینز کی رکنیت معطل کردی،معطل ہونے والوں میں سینیٹ کے 12،قومی اسمبلی کے 70،پنجاب اسمبلی کے 115،سندھ اسمبلی کے 40،خیبر پختونخوا اسمبلی کے 60اور بلوچستان اسمبلی کے 21اراکین شامل ہیں،معطل ہونے والے پارلیمنٹیرینزسینیٹ،قومی اور صوبائی اسمبلیوں سمیت کسی بھی کمیٹی میں شرکت نہیں کر سکیں گے،الیکشن کمیشن کی جانب سے چیئرمین سینیٹ اور سپیکر سمیت چاروں صوبائی اسمبلیوں کے سپیکر ز کو مراسلے بھجوا دئیے گئے۔جمعرات کے روز الیکشن کمیشن سے جاری ہونے والے فہرست کے مطابق اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے سینیٹ،قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کے اراکین کی رکنیت معطل کر دی گئی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق سینیٹ آف پاکستان کے اراکین رانا محمود الحسن،مصدق ملک،حافظ عبدالکریم وفاقی وزیر قانون محمد فروغ نسیم،مسز رخسانہ زبیری،ذیشان خانزادہ،پیر صابر شاہ، محمد ایوب،فدا محمد،حاصل خان بزنجواور تاج محمد افریدی شامل ہیں قومی اسمبلی سے محبوب شاہ،علی خان جدون،اربات عامر ایوب،ناصر خان،شوکت علی،محمد یعقوب شیخ،وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری،محمد اقبال خان،صداقت علی خان،سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف،عامر محمود کیانی،چوہدری فرخ الطاف،وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری،سید فیض الحسن،رانا شمیم احمد خان،ذولفقار احمد،چوہدری شوکت علی بھٹی،عمر اسلم خان،محمد ثناء اللہ خان مستی خیل،محمد افضل خان،فرخ حبیب،ریاض احمد،محمد برجیس طاہر،راحت آمان اللہ بھٹی،احمد رضا مانیکا،محمد ابراہیم خان،میاں محمد شفیق،طاہر اقبال،عالم داد لالیکا،نورالحسن تنویر،وفاقی وزیر ہاؤسنگ چوہدری طارق بشیر چیمہ،مخدوم سید سمیع الحسن گیلانی،سید مبین احمد،محمد شبیر علی،مہر ارشار احمد خان،عامر طلال خان،عبدالمجید خان،خواجہ شیراز محمود،وزیر مملکت برائے موسمیات زرتاج گل،سردار محمد خان لغاری،احسن الرحمن مزاری،خورشید احمد جونیجو،سردار محمد بخش خان مہر،شمس النساء،محمد اکرم،محمد عالمگیر خان،عامر حسین،عبدالقادر پٹیل،محمد اسرار ترین،کمال الدین،عصمت اللہ،منزہ حسن،عاصمہ حدید،پارلیمانی سیکرٹری جویریہ ظفر،ڈاکٹر سیمن عبدالرحمن بخاری،رخشندہ نوید،پارلیمانی سیکرٹری وجہیہ اکرام،فرخ خان،غزالہ سیفی،نذہت پٹھان،نصرت وحید،ساجدہ بیگم،نورین فاروق خان،پارلیمانی سیکرٹری شاندانہ گلزار خان،ظل ہمہ،شاہین ناز سیف اللہ،شہناز نصیر بلوچ،جمشید تھامس،نوید عامر اور جیمز اقبال شامل ہیں نوٹیفیکیشن کے مطابق پنجاب اسمبلی کے 371ممبران میں 255ممبران نے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرائی ہیں اور 115ممبران کی رکنیت معطل کی گئی ہے سندھ اسمبلی کے 168ممبران میں سے 128ممبران نے رکنیت جمع کرائی ہے اور 40ممبران کی رکنیت معطل کی گئی ہے،خیبر پختونخوااسمبلی کے ا145ممبران میں سے 85نے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرائی ہیں جبکہ 60 ممبران کی رکنیت معطل کی گئی ہے جبکہ بلوچستان اسمبلی کے 65ممبران میں سے 44نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع کرائی ہیں اور 21ممبران جنہوں نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کرائی ہیں کی رکنیت معطل کی گئی۔ نوٹیفیکیشن کے مطابق اپنے سالانہ اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرانے والے پارلیمنٹرینز کی رکنیت اس وقت تک معطل رہے گی جب تک وہ اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کرادیں کمیشن نے اس سلسلے میں چیئرمین سینیٹ اور سپیکر قومی اسمبلی سمیت چاروں صوبائی اسمبلیوں کے سپیکرز کو مراسلے ارسال کردئیے ہیں کہ معطل ہونے والے اراکین سینیٹ،قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلیوں کے اجلاسوں سمیت قائمہ کمیٹیوں میں شرکت کرنے کے اہل نہیں رہے ہیں۔

ارکان اسمبلی معطل

مزید : صفحہ اول