میڈیکل مشینری عطیہ کرنے والے ملکی و غیرملکی عطیہ کنندگان کے لیے پالیسی سازی کا فیصلہ

میڈیکل مشینری عطیہ کرنے والے ملکی و غیرملکی عطیہ کنندگان کے لیے پالیسی سازی ...
میڈیکل مشینری عطیہ کرنے والے ملکی و غیرملکی عطیہ کنندگان کے لیے پالیسی سازی کا فیصلہ

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر کیپٹن(ر)محمد عثمان نے ڈیویلپمنٹ ونگ کو میڈیکل مشینری عطیہ کرنے والوں کے حوالے سے پالیسی بنانے کی ہدایت جاری کی ہے۔

تفصیلات کےمطابق میڈیکل مشینری عطیہ کرنےوالےملکی وغیرملکی عطیہ کنندگان کےلیےپالیسی سازی کافیصلہ کیاگیا ہے،صوبہ بھر میں پالیسی کی عدم موجودگی میں کہیں اضافی اور کہیں مشینری بالکل موجود نہیں ہے،عطیہ کنندگان زیادہ تر اپنی مرضی کی جگہوں پر عطیہ کرتے ہیں جس سے وسائل کی فراہمی میں عدم توازن پیدا ہوتا ہے۔سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر کا ڈیویلپمنٹ ونگ کو پالیسی بنانے کی ہدایات جاری کرتے ہوئےکہنا تھا کہ عطیہ وصول کرنے کے حوالے سے پالیسی کی موجودگی میں آلات کی فراہمی بہتر بنائی جا سکے گی ،پنجاب بھر کے ڈی ایچ کیو اور ٹی ایچ کیو ہسپتالوں میں تمام مشینری کو ریشنلائز کیا جائے گا۔کیپٹن (ر) محمد عثمان کا مزید کہنا تھا کہ کسی ہسپتال میں چار تو کسی میں صرف ایک مشین کی موجودگی سے مریضوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے،کوشش کریں عطیہ اُن ہسپتالوں میں وصول کیا جائے جہاں مشینری کی زیادہ ضرورت ہو۔اُنہوں نے واضح کیا کہ تمام ہسپتالوں میں ضرورت کے مطابق مشینری رکھی جائے گی،اضافی مشینری وہاں بھیجی جائے گی جہاں مشینری پہلے سے موجود نہیں ہوگی،محکمے میں وسائل کا بہترین استعمال کرنے سے قومی خزانے پر بوجھ کم اور عوام کی سہولت میں اضافہ ہو گا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور