ٹیوشن پڑھنے والے طالبعلم نے اپنی ٹیچر کی تصاویر فحش ویب سائٹ پر لگادیں

ٹیوشن پڑھنے والے طالبعلم نے اپنی ٹیچر کی تصاویر فحش ویب سائٹ پر لگادیں
ٹیوشن پڑھنے والے طالبعلم نے اپنی ٹیچر کی تصاویر فحش ویب سائٹ پر لگادیں

  

آگرہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت کے شہر آگرہ میں ٹیوشن پڑھنے والے طالبعلم نے اپنی خاتون ٹیچر کی تصاویر  ایڈٹ کر کے فحش ویب سائٹ پر ڈال دیں۔ طالبعلم نے خاتون ٹیچر کو تاج نگری کی جسم فروش لڑکی قرار دیتے ہوئے لکھا کہ ایک رات کے لیے اس کی خدمات 1500 روپے میں حاصل کی جاسکتی ہیں۔

بھارتی ٹی وی چینل نیوز18 کے مطابق  ویب سائٹ پر خاتون ٹیچر کی تصویر اور موبائل نمبر دیکھ کر مختلف کالز آنے لگیں جس کی وجہ سے وہ ڈپریشن میں چلی گئی۔ آخرکار اس نے سائبرسیل کو شکایت کی تو تفتیش میں پتا چلا کہ اس سےٹیوشن پڑھنے والا گیارہویں جماعت کا طالبعلم ہی ملوث نکلا، پولیس نے مقدمہ درج کے نابالغ طالبعلم اور اس کےایک بالغ ساتھی کو بھی  گرفتار کرلیا۔ 

واضح رہے کہ گیارہویں جماعت کا طالبعلم خاتون ٹیچر سے انگلشن دو مہینے ٹیوشن پڑتا رہا، اس دوران اس نے ٹیچر سے موبائل نمبر، فیس بک پروفائل سے تصاویر لے لیں جنہیں بعد میں ایڈٹ کر کے فحش ویب سائٹ پر ڈال کر جسم فروش لڑکی قرار دے دیا۔

مزید :

بین الاقوامی -