ملک میں کھاد بحران ،  پیپلز پارٹی نے تحقیقات کا مطالبہ کردیا 

ملک میں کھاد بحران ،  پیپلز پارٹی نے تحقیقات کا مطالبہ کردیا 
ملک میں کھاد بحران ،  پیپلز پارٹی نے تحقیقات کا مطالبہ کردیا 
سورس: File Photo

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پیپلزپارٹی کی مرکزی رہنما ا ور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے ملک میں جاری کھاد بحران کی تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ نااہل وفاقی حکومت کھاد بحران کے حل کی بجائے سیاست اور الزام تراشی میں مصروف ہے۔

 ڈاکٹر نفیسہ شاہ نےکہا کہ آٹا,چینی،گندم بحران کے بعداس وقت ملک کو کھاد کےبحران کاسامناہے،ملک میں کھادکابڑھتابحران باعث تشویش اور کئی سوالات کو جنم دیتا ہے ،نا اہل وفاقی حکومت بحران کے حل کی بجائے سیاست اور الزام تراشی میں مصروف ہے، وفاقی وزرا دوسروں پر الزام لگانے کی بجائے اپنے گریبان میں جھانکیں۔

ڈاکٹر نفیسہ شاہ نےکہا کہ علی زیدی گھوٹکی سےآپ کےوزیر کھاد چرا کر لے گئے ہیں، گھوٹکی والے پہلے سے ہی غصے سے بھرے بیٹھے ہیں،کھاد کا بحران اسی طرح جاری رہا تو گندم کے فصل کو شدید نقصان ہو سکتا ہے، کھاد کے پیدا ہونیوالے بحران کے باعث ملک میں غذائی قلت کا بھی شدید خدشہ ہے،وفاقی حکومت بحران کو تسلیم کرنے اور حل نکالنے کی بجائے عوام کے جائز خدشات اور تشویش کو جھوٹ قرار دیکر غلط بیانی سے کام لے رہی ہے۔

ڈاکٹر نفیسہ شاہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس وقت کسان اور عوام شدید پریشانی میں مبتلا ہیں، کھاد کے حصول کے لئے کھاد لے جانی والی گاڑیوں پر حملے ہو رہے ہیں، کھاد بحران کے حل کے لئے بروقت اقدامات کیوں نہیں اٹھائے گئے،پیپلزپارٹی آٹا، چینی اور گندم بحران کی طرح کھاد بحران کے معاملے کو دبنے نہیں دے گی۔ حکومت تحقیقات کرے کہ کھاد بحران کے اصل ذمہ داران کون ہیں؟ اورعوام کو بتایا جائے کہ ملک میں کھاد بحران کی وجوہات کیا ہیں؟۔

مزید :

کسان پاکستان -