سٹیٹ بینک اب پاکستان کے معاملات سے مکمل طور پر آزاد ہے،شاہد خاقان عباسی

سٹیٹ بینک اب پاکستان کے معاملات سے مکمل طور پر آزاد ہے،شاہد خاقان عباسی
سٹیٹ بینک اب پاکستان کے معاملات سے مکمل طور پر آزاد ہے،شاہد خاقان عباسی

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نےکہا کہ جمعرات کو ایک اور بل پاس ہوا ،جس کی معیشت پر گہرے اثرات ہوں گے،سٹیٹ بینک اب  پاکستان کے معاملات سے مکمل طور پر آزاد ہے ۔

سابق وزیر اعظم نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملکی سلامتی کا دارومدار معیشت پر ہوتاہے ،ملک کی معیشت سٹیٹ بینک کے حوالے کردی گئی ہے ،سٹیٹ بینک 1956کے ایکٹ کے مطابق خود مختار ہے ،اگر ایکٹ سینیٹ سے پاس ہوا تو سٹیٹ بینک حکومت و پارلیمان کی نہیں سنے گا،حکومت ملکی ترقی کے لیے کام کرے تو وہ سٹیٹ بینک کے تابع ہوگی،سٹیٹ بینک کے کام کرنے کی نوعیت اور شکل کو تبدیل کردیا گیا ۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سٹیٹ بینک اب مالیاتی نظام کے کنٹرول کے بجائے مہنگائی کو دیکھے گا، گورنر سٹیٹ بینک ملک میں دوسرا طاقتو ر شخص ہوگا،اس بورڈ کوختم کردیاگیاجس سےحکومت مشاورت کرتی تھی ، یہ ایک عجیب نظام ہے جس کی سمجھ نہیں آرہی، ان افراد کی تعیناتی پرکوئی پوچھ گچھ نہیں ہوسکےگی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -سیاست -