ایم کیو ایم ہماری اتحادی تھی تو ہر دو ہفتے میں حکومت سے الگ ہوجاتی تھی ، مرتضیٰ وہاب 

ایم کیو ایم ہماری اتحادی تھی تو ہر دو ہفتے میں حکومت سے الگ ہوجاتی تھی ، ...
ایم کیو ایم ہماری اتحادی تھی تو ہر دو ہفتے میں حکومت سے الگ ہوجاتی تھی ، مرتضیٰ وہاب 

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ جب ایم کیو ایم پاکستان پیپلزپارٹی کی  اتحادی تھی تو ہر دو ہفتے میں حکومت سے علیحدہ ہو جاتی تھی مگر مجال ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں ایک بار بھی انہوں نے  حکومت چھوڑنے کا عندیہ دیا ہو۔ 

کراچی میں مرتضیٰ وہاب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ علی زیدی کہہ رہے ہیں کہ وہ گھوٹکی سے احتجاج کرینگے ، یہ احتجاج کریں ، عوام کو بتائیں گے ،  پی ٹی آئی  اور  جی ڈی اے  کے احتجاج کی خبر سن کر حیرت ہوئی ،  ملک میں گیس کی بد ترین لو ڈشیڈنگ ہو رہی ہے ، وفاقی حکومت نے کہا تھا منی بجٹ سے فرق نہیں پڑے گا لیکن بجٹ پاس ہوتے ہی پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا۔ نوکریاں دینےکی بات کرنے والوں نے لاکھوں افراد کو بیروزگار کر دیا۔

 ایڈمنسٹریٹر کراچی نے کہا کہ انہیں بلاول بھٹو کے مارچ سے گھبراہٹ ہو رہی ہے ، ترین بڑی سیاسی جماعتوں نے مارچ کیا مگر عوام نے وہ رسپانس نہیں دیا ،  انہیں احتجاج کرنا ہے تو شوق سے کریں ، انہوں نےسندھ کے ساتھ جو کیا عوام انہیں جواب دیں گے ، نکمی حکومت ہر سال کہتی ہے کہ ہمارے پاس گیس نہیں ، انہوں نے تین سال  میں  عوام کو ذلت و رسوائی دی ۔ 

مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ حکومت نے سٹیٹ بینک کو آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھوا دیا ہے ۔

مزید :

قومی -سیاست -