اب اگر کوئی گٹر کا ڈھکن چوری کرتا، بیچتا یا خریدتا پکڑا گیا تو اس کے خلاف دفعہ 324 کا مقدمہ ہوگا، یہ کتنی خطرناک ہوسکتی ہے؟

اب اگر کوئی گٹر کا ڈھکن چوری کرتا، بیچتا یا خریدتا پکڑا گیا تو اس کے خلاف دفعہ ...
اب اگر کوئی گٹر کا ڈھکن چوری کرتا، بیچتا یا خریدتا پکڑا گیا تو اس کے خلاف دفعہ 324 کا مقدمہ ہوگا، یہ کتنی خطرناک ہوسکتی ہے؟

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف سیکرٹری پنجاب کامران علی افضل نے حکم دیا ہے کہ   گٹر کا ڈھکن چرانے، بیچنے یا خریدنے والے کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج ہوگا۔

واضح رہے کہ دو روز قبل فیصل آباد میں کمسن بچہ گٹر کامین ہول کھلا ہونے کے باعث گر کر جان کی بازی ہار گیا تھا۔چیف سیکرٹری کی جانب سے جاری مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ہمارے لیے یہ بات باعث شرم ہے کہ بچے گٹروں کے ڈھکن نہ ہونے کے باعث گٹروں میں گر کر جان کی بازی ہار جاتے ہیں۔اس میں واسا اور دیگر متعلقہ افسران کی کوتاہی ہے،آئندہ ایسا کوئی واقعہ رونما ہوا تو ان کے خلاف غفلت اور لاپرواہی برتنے کی کارروائی ہوگی جبکہ  گٹر کا ڈھکن چرانے، بیچنے یا خریدنے والے کے خلاف اقدام قتل تعزیرات پاکستان کی دفعہ 324 کا مقدمہ درج ہوگا۔

مزید :

قومی -