ایران کے سپریم لیڈر خامنہ ای کی بھانجی کو گرفتار کرلیا گیا

ایران کے سپریم لیڈر خامنہ ای کی بھانجی کو گرفتار کرلیا گیا
ایران کے سپریم لیڈر خامنہ ای کی بھانجی کو گرفتار کرلیا گیا

  

تہران (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایران کے سپریم لیڈر علی خامنہ ای کی بھانجی فریدہ مراد خانی کو تہران میں گرفتار کرلیا گیا۔ انہیں جمعرات کو  تہران میں اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ اپنے گھر واپس جا رہی تھیں۔

العربیہ کے مطابق  فریدہ کے بھائی محمود  مراد خانی جو کہ فرانس میں جلا وطن ہیں انہوں نے اپنی بہن کی گرفتاری کی تصدیق کی ہے۔  محمود نے  کہا کہ یہ ایرانی حکومت کے ظلم کی انتہا ہے، فریدہ کا سیاست سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، ایران میں اتنی آزادی نہیں ہے کہ آپ  سیاسی طور پر متحرک ہوسکیں، وہ صرف انسانی حقوق کا دفاع کرتی ہیں اور صرف خیراتی کاموں اور پرامن مظاہروں میں شریک ہوتی ہیں۔

جمعہ کے روز اپنے گھر والوں سے فون پر بات کرتے ہوئے فریدہ نے بتایا کہ انہیں ایون کی جیل میں منتقل کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ اگرچہ ان کے ماموں ملک کے سپریم لیڈر ہیں لیکن فریدہ ایرانی حکومت کی سخت مخالف ہیں، اس سے پہلے بھی کئی بار ایرانی خفیہ ایجنسیوں سے ان کی مڈ بھیڑ ہوچکی ہے۔ وہ ایران میں سزائے موت کے خاتمے اور قیدیوں کے حقوق کی ایک توانا آواز ہیں۔  ایرانی حکام نے تاحال ان کی گرفتاری کی کوئی وجہ بیان نہیں کی۔

مزید :

بین الاقوامی -