ایپکا کا ملازمین کی برخاستگی اور تبادلوں کیخلاف ایوان وزیر اعلٰی کے گھیراﺅ کا اعلان

ایپکا کا ملازمین کی برخاستگی اور تبادلوں کیخلاف ایوان وزیر اعلٰی کے گھیراﺅ ...

  

                     لاہور(لیاقت کھرل) محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب کے سرکاری ملازمین کی تنظیم (ایپکا) کے عہدیداروں نے ملازمین کی بلاوجہ ٹرانسفر، معطلی اور نوکریوں سے برخاستگی پر اینٹی کرپشن کے صوبائی ہیڈ کوارٹر اور اینٹی کرپشن کے پنجاب بھر میں قائم دفاتر میں غیر معینہ مدت کے لئے ہڑتال، چیف سیکرٹری اور ایوان وزیر اعلیٰ کے دفاتر کے گھیراﺅ کی دھمکی دے دی ہے، ان خیالات کا اظہار ایپکا کے صوبائی اور ریجنل عہدیداروں نے” پاکستان“ فورم میں کیا اس موقع پر ایپکا محکمہ اینٹی کرپشن کے صوبائی سرپرست ملک محمد فیصل نے کہا کہ ڈی جی اینٹی کرپشن گریڈ 21 میں پر موٹ ہونے کے بعد کسی وفاقی محکمے کے سیکرٹری کی سیٹ نہ ملنے کے بعد ملازمین کے دشمن بن گئے ہیں اور ملازمین کے دشمن بن گئے ہیں اور ملازمین کی چھوٹی سی غلطی پرانے دور دراز شہر میں تبدیل کر دیا جاتا ہے یا پھر اسے کئی کئی ماہ کیلئے معطل کر دیا جاتا ہے ایپکا کے صوبائی جنرل سیکرٹری ارشد علی باجوہ نے کہا کہ ڈی جی اینٹی کرپشن نے بغیر کسی انکوائری کے ملازمین کی معطلی اور نوکریوں سے برخاستگی کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے اس سلسلہ میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری کو تحریری طور پر آگاہ کر دیا گیا ہے۔ ڈی جی نے ملازمین دشمن رویہ تبدیل نہ کیا تو پھر دما دم مست قلندر ہو گا اور اینٹی کرپشن کے صوبائی ہیڈ کوارٹر اور ریجنل دفاتر سمیت ضلعی دفاتر کا غیر معینہ مدت کے لئے بائیکاٹ کیا جائے گا اور چیف سیکرٹری اور ایوان وزیر اعلیٰ کا گھیراﺅ کیا جائے گا۔ اس موقع پر ایپکا کے عہدیداروں سید علی احسان، شاہد خان کاکڑ، اور حمد سرور نے کہا ہے کہ ایک طرف ڈی جی نے ملازمین کے ساتھ نا مناسب اور غیر منصفانہ رویہ شروع کررکھا ہے تو دوسری جانب ایپکا کے عہدیدار ان سے ملاقات کر کے مطالبات سے آگاہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں تو ڈی جی اینٹی کرپشن صاف انکار کر دیتے ہیں ایپکا کے عہدیدار میاں محمد نواز اور دیگر نے کہا کہ اس میں ڈی جی اینٹی کرپشن کو حقائق سے آگاہ کیا جاتا ہے تو اس ملازم کے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت انکوارئی کا حکم دے دیا جاتا ے۔ سید علی احسان نے کہا کہ ڈی جی کی ملازمین دشمن پالیسیوں سے ملازمین میں خوف و ہراس پھیل چکا ہے اور ملازمین صبح دفتر آتے ہیں تو انہیں پتہ چلتا ہے کہ ان کا بغیر کسی وجہ کے ڈی جی خان یا کسی اور دور دراز کے اضلاع میں تبادلہ کر دیا گیا ہے، جس سے ملازمین خودکشیاں کرنے پر مجبور ہوں گے، اس میں چیف سیکرٹری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری اور وزیر اعلیٰ کو نوٹس لینا چاہئے، وگرنہ ملازمین میں پائی جانے والی بد دلی سے کوئی بڑا حادثہ رونما ہو سکتا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -