پرویز خٹک کی قیادت میں لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاجی جلوس ،پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی

پرویز خٹک کی قیادت میں لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاجی جلوس ،پنجاب کی بجلی بند کرنے ...

  

                        پشاور(خبر نگار خصوصی ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے پنجاب کی بجلی بند کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے خبر دار کیا ہے کہ اگر خیبرپختونخوا کو پنجاب کی گندم روکی جاسکتی ہے تو اپنا حق نہ ملنے پر ہم بھی پنجاب کی بجلی بند کرسکتے ہیں چودہ اگست کو دھاندلی سے جیتنے والوں (مسلم لیگ ن ) کی حکومت کا تختہ الٹ جائے گا ،وہ صوبہ میں جاری بجلی کی لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کررہے تھے ،بدھ کے روز خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے مسلسل اور ناروا لوڈشیڈنگ کے خلاف پشاور میں پیسکو کے دفاتر واپڈا ہاﺅس کے سامنے احتجاج کیا گیا جس میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک ،ان کی کابینہ کے ارکان ،اراکین اسمبلی اور تحریک انصاف وجماعت اسلامی کے کارکنوں کے علاوہ تاجر برادری نے بھی شرکت کی ،احتجاجی ریلی کی شکل میں مظاہرین وزیر اعلیٰ کی قیادت میں کرنل شیر خان سٹیڈیم سے روانہ ہوئے مظاہرین تمام رکاوٹیں عبور کرکے واپڈا ہاﺅس کے بیریئر توڑتے ہوئے اندر داخل ہوئے اور وفاقی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی، پیسکو کے چیف ایگزیکٹیو اور دیگر حکام نے وزیراعلیٰ اور ریلی کے شرکاءکا استقبال کیا ۔واپڈا ہاﺅس پہنچنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہا کہ خیبر پختونخوا تین ہزار پانچ سو میگا واٹ بجلی پیدا کرتا ہے صوبہ کی ضرورت چوبیس سو میگاواٹ ہے ہم اپنی ضرورت سے نو سو میگا واٹ بجلی زیادہ پیدا کرتے ہیں کوٹہ کے تحت ہمارے صوبہ کو دو ہزار میگا واٹ بجلی ملنی چاہئے لیکن ہمیں صرف تیرسو میگا واٹ مل رہی ہے یوں خیبر پختونخوا چار روپے فی یونٹ بجلی پیدا کرکے مرکز کو دے رہا ہے لیکن اسکے عوض ہم مرکز سے سولہ سے اٹھارہ روپے فی یونٹ بجلی خرید رہے ۔وزیر اعلیٰ نے کہاکہ بجلی کی بلا روک ٹوک فراہمی ہمارا حق ہے جو ہمیں نہیں مل رہا یہ زیادتی ہے ہمارا صوبہ اپنی ضرورت سے زیادہ بجلی گیس اور تیل پیدا کررہا ہے لیکن ہمیں نہ تو بجلی ملتی ہے اور نہ گیس دی جارہی ہے ،انہوں نے خبر دار کیا کہ اگر واپڈا نے اپنا رویہ ٹھیک نہ کیا تو صوبائی حکومت اسے کو دی گئی سیکورٹی واپس لے لی گی ،سسٹم کی اپ گریڈیشن صوبائی حکومت کی نہیں وفاق کی ذمہ داری ہے صوبہ کو اسکے حق سے محروم رکھا جارہا ہے ۔پرویز خٹک نے کہا کہ اگر واپڈا سے بجلی کا نظام نہیں سنبھال جارہا تو پیسکو تمام اختیارات کے ساتھ ان کے حوالے کردیا جائے ہم صوبہ میں کم قیمت پر لوڈشیڈنگ کے بغیر بجلی کی 24 گھنٹے فراہمی یقینی بنائیں گے ۔پانی وبجلی کے وزیر مملکت کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام بجلی چور نہیں عابد شیر علی اپنا منہ بند کریں اور پہلے واپڈا کے چوروں کو جیلوں میں ڈالیں ہمیں چوبیس گھنٹے مسلسل بجلی ملنی چاہیئے ،شرکاءنے وزیر اعظم نوازشریف اور عابد شیر علی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ملک بھر میں یکساں لوڈشیڈنگ کا مطالبہ کیا ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اگر واپڈا نے لوڈشیڈنگ کا مسئلہ حل نہ کیا تو صوبائی حکومت مزید تعاون نہیں کرے گی، وفاقی حکومت کو دھاندلی کی پیداوار قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دھاندلی کی حکومت مزید نہیں چلے گی اور چودہ اگست کا آزادی مارچ مسلم لیگ (ن) کی حکومت کا تختہ الٹ دیگا ، انہوں نے کہا کہ حکومت اگر پاور کرائسز ختم کرنے میں ناکام ہوگئی ہے تو واپڈا کا انتظام خیبر پختونخوا کو حوالے کردے ۔

مزید :

صفحہ اول -