نابالغ لڑکی کی شادی کروانے والے ملزمان کی عدم گرفتاری کے خلاف لواحقین کا احتجاج

نابالغ لڑکی کی شادی کروانے والے ملزمان کی عدم گرفتاری کے خلاف لواحقین کا ...

  

لاہور(کرائم سیل)تھانہ باغبانپورہ پولیس کی جانب سے اقلیتی برادری کی نابالغ لڑکی کی شادی کروانے والے ملزمان کو نہ پکڑنے کے خلاف لڑکی کے لواحقین کا شالامار روڈ پر رات گئے شدید احتجاج ،پولیس نے ایک گھنٹہ کے بعد ملزمان کو گرفتار کرنے کی یقین دہانی کروا کر مظاہرین کو منتشر کر وا دیا۔تفصیلات کے مطابق چند روز قبل باغبانپورہ کی رہائشی اقلیتی برادری کی مریم بی بی نے شعیب یونس نامی شخص سے شادی کر لی تھی جس کے خلاف لڑکی کے باپ امین مسیح نے تھانہ باغبانپورہ میں مقدمہ نمبر 35557 درج کروایا لیکن پولیس نے شعیب یونس کو پکڑنے کے حوالے سے کوئی کارروائی نہیں کی جس پرمریم بی بی کے خاندان کے افراد نے گزشتہ رات ساڑھے گیارہ بجے تھانہ باغبانپورہ کے سامنے شدید احتجاج کیا اور شالامار روڈ کو مکمل طور پر بلاک کر دیا۔

پولیس کے مطابق شعیب یونس کی جانب سے نکاح نامہ کی کاپی ہمیں فراہم کر دی گئی تھی اس لیے اس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔جبکہ مظاہرین کا کہنا تھا کہ مریم بی بی نا بالغ اور 12سال کی ہے اوراس کا نکاح نہیں ہو سکتا ہے لواحقین کی جانب سے مریم بی بی کا برتھ سرٹیفکیٹ پولیس کو فراہم کر دیا گیا ہے لیکن ابھی تک پولیس نے ملزمان کو پکرنے اور مریم بی بی کو بازیاب کروانے کے حوالے سے کوئی کارروائی نہیں کی ۔پولیس نے ملزمان کو پکڑنے کی یقین دہانی کروا کر مظاہرین کو پر امن طور پر منتشر کر وا دیا ۔

مزید :

علاقائی -