سابق لیسکو چیف ارشد رفیق کی ٹرانسفارمرز کرپشن کیس میں بھی ضمانت منظور

سابق لیسکو چیف ارشد رفیق کی ٹرانسفارمرز کرپشن کیس میں بھی ضمانت منظور

  

لاہور(نامہ نگار)سپیشل جج سینٹرل نے سابق لیسکو چیف ارشد رفیق کی ٹرانسفارمرز کرپشن کیس میں بھی ضمانت منظور کر تے ہوئے 5لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کی ہدایت کردی ہے ۔واضح رہے کہ ٹرائل کورٹ بجلی کی غیرقانونی فروخت کے کیس میں پہلے ہی ارشد رفیق کی ضمانت منظور کر چکی ہے جبکہ ناجائز اثاثے بنانے کے تیسرے مقدمہ میں ابھی ایف آئی اے انکوائری کر رہا ہے ۔سپیشل جج سینٹرل عبدالرشید ملک کے روبرو گزشتہ روز ملزم ارشد رفیق کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ حکومت کی ہدایت پر ایف آئی اے نے کرپشن کا ناجائز اور بے بنیاد مقدمہ بنایا اور اس مقدمے کے ذریعے اسکی کردار کشی کی،انہوں نے کہا کہ گرفتاری کے باوجود ایف آئی اے ابھی تک کرپشن کا ایک بھی ثبوت سامنے نہیں لا سکی ہے لہذا عدالت ملزم ارشد رفیق کی ضمانت منظور کرے۔سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم ارشد رفیق نے ٹرانسفارمر کی مرمت اورخریداری میں کرپشن کی ہے جس کی تحقیقات کی جا رہی ہیںجس پر عدالت نے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد سابق لیسکو کے چیف ارشد رفیق کو ٹرانسفارمر کرپشن کیس میں ضمانت پر رہاکرنے کا حکم جاری کردیا ہے ۔

ضمانت منظور

مزید :

صفحہ آخر -