لے پالک بچہ نے پہلی ہی رات عیاش فرضی ماں کی نیندیں حرام کردیں

لے پالک بچہ نے پہلی ہی رات عیاش فرضی ماں کی نیندیں حرام کردیں
لے پالک بچہ نے پہلی ہی رات عیاش فرضی ماں کی نیندیں حرام کردیں

  

 بخارسٹ(نیوز ڈیسک)شہرت اور نیک نامی حاصل کرنے کیلئے میڈیا کے سامنے بڑے بڑے دعوے کرنا اور بات ہے جبکہ انسانی ہمدردی کے تحت حقیقی طور پر کام کرنا بالکل مختلف بات ہے۔رومانیہ کے سماجی حلقوں کی مشہور و معروف شخصیت اور سماجی کارکن کی شہرت رکھنے والی 26سالہ مونیکا کولمبیو نے بھی کیمروں کے سامنے خوبصورت مسکراتے چہرے کے ساتھ یہ دعوی کیا کہ وہ ایک بے سہارا بچے کو گود لے رہی ہے۔اس کا کہنا تھا کہ وہ اس بچے کو ماں کی طرح پالے گی اور اس کی زندگی کو ہر دکھ اور غم سے بچا کر دکھے گی۔ جب سارے اخباروں اور ٹی وی چینلوں پر مونیکا کی نیک دلی کی خبریں چل گئیں اور لوگوں نے اس کی خوب تعریف و توصیف کر لی تو اگلے ہی دن یہ خاتون معصوم بچے کو خاموشی سے بے سہارا بچوں کے مرکز میں واپس چھوڑ دے گی۔

معلوم ہوا کہ نازک مزاج مونیکا بچے کے رات کو رونے سے اس قدر بے آرام ہوئی کے اگلی صبح اسے واپس کرنے پہنچ گئی۔اس نے ادارے سے یہ گزارش بھی کی کہ معاملے کو خفیہ رکھا جائے تا کہ اس کی نیک نامی کو کوئی نقصان نہ پہنچے اس سے یہ خاتون 18سال کی عمر میں ایک 56سالہ ارب پتی سے شادی کعنے کی وجہ سے خبروں کا موضوع رہی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -